طالبان مذاکراتی کمیٹی طالبان شوریٰ سےملاقات کیلئے بذریعہ ہیلی کاپٹر وزیرستان روانہ

پشاور : حکومت کی جانب سے کالعدم طالبان سے براہ راست مذاکرات کیلئے نئی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔ جب کہ دوسری جانب کالعدم طالبان مذاکراتی کمیٹی طالبان شوریٰ سے مشاورت اور آئندہ کے لائحہ عمل کیلئے آج وزیرستان روانہ ہوگئی۔ شمالی وزیرستان جانے کیلئے طالبان کمیٹی بذریعہ ہیلی کاپٹر روانہ ہوئی۔ جے یو آئی س کے مولانا عبدالحئی بھی ارکان کے ساتھ وزیرستان روانہ ہوئے۔

طالبان رابطہ کار کمیٹی پشاور ایئرپورٹ سے مولانا یوسف شاہ اور پروفیسر ابراہیم کے ہمراہ جے یو آئی س کے سربراہ مولانا عبدالحئی کو لے کر بذریعہ ہیلی کاپٹر وزیرستان روانہ ہوئی۔ اس موقع پر مولانا یوسف شاہ کا کہنا تھا کہ قوم کو واپسی پر جلد بڑی خوشخبری دیں گے، تاہم فریقین سنجیدگی اور محتاط رویہ اپنائیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار اور طالبان رابطہ کار کمیٹی کے اراکین کے درمیان ملاقات کے بعد اس بات کا فیصلہ کیا گیا کہ طالبان رابطہ کار کمیٹی جمعرات کے روز مشاورت کیلئے وزیرستان جائے گی۔ اجلاس میں اس بات کا فیصلہ بھی کیا گیا کہ طالبان رابطہ کار کمیٹی وزیرستان جا کر نئی حکومتی کمیٹی کے ساتھ طالبان کی براہ راست ملاقات کے وقت اور جگہ کا تعین کرے گی۔ ‫طالبان کمیٹی نے حکومتی کمیٹی کے ایک رکن کو بھی میران شاہ ساتھ لے کر جانے کی تجویزدی ہے۔

دوسری جانب حکومت نے  طالبان سے مذاکرات کے لئے بیوروکریٹس پر مشتمل نئی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔ سیکریٹری پورٹ اینڈ شپنگ حبیب اللہ خٹک چاررکنی کمیٹی کے سربراہ مقررکئے گئے ہیں۔ دیگر اراکین میں وزیراعظم کے ایڈیشنل سیکریٹری فواد حسن فواد، رستم شاہ مہمند اور ایڈیشنل سیکریٹری فاٹا ارباب عارف شامل ہیں، نئی کمیٹی کی تشکیل پر تحریک انصاف سمیت دیگر سیاسی جماعتوں اور اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیاگیا ہے۔ سماء

jundullah

missiles

trains

Benazir

Tabool ads will show in this div