خواتین پر تشدد مہنگا پڑیگا، بل منظور

3a

لاہور : خواتین پر تشدد کے خاتمے کیلئے پنجاب اسمبلی میں بل منظور کرلیا گیا، مارپیٹ کی شکایت پر خاوند 2 دن گھر نہیں آسکے گا جبکہ خرچ نہ دینے والوں کی تنخواہ سے کٹوتی کرلی جائے گی۔

عورتوں پر تشدد کرنے والے خبردار ہوجائیں، پنجاب اسمبلی نے بل منظور کرليا، اب عورت کو اس کی مرضی کے بغير گھر سے نہيں نکالا جاسکے گا، ليکن تشدد کا خدشہ ہوا تو مرد 2 دن گھر ميں قدم نہيں رکھ پائے گا۔

3

بل کے مطابق عورت پر ہاتھ اٹھايا تو معاملہ عدالت ميں جائے گا اور فاضل جج مناسب سمجھے تو مرد کو ٹريکر بھی لگايا جاسکے گا، عدالتی حکم کے باوجود نان نفقہ نہ دینے والے کی تنخواہ سے رقم کاٹ لی جائے گی۔

مزید جانیے ؛ ایوان میں حمایت، باہر مخالفت

تشدد میں ملوث شخص کیلئے قید کی سزا کے ساتھ ساتھ سرکاری کارروائی ميں مداخلت پر مزيد 6 ماہ قيد اور 5 لاکھ روپے جرمانہ ہوگا۔

خواتين کے تحفظ کے اس قانون ميں مرد حضرات کیلئے صرف ايک ہی شق ہے، جس کے تحت غلط شکايت کرنے والی خاتون کو 3 ماہ قيد اور 50 ہزار روپے جرمانہ کيا جاسکے گا۔ سماء

PTI

PUNJAB ASSEMBLY

Women Protection Bill

Tabool ads will show in this div