کراچی بینک لاکرز ڈکیتی، تفتیش کے دوران اہم انکشافات

اسٹاف رپورٹ

کراچی : کراچی سے خبر ہے جہاں رواں ہفتے بینک لاکر توڑے جانے کی تفتیش میں اہم انکشافات ہوئے ہیں، واردات کی منصوبہ بندی 8 ماہ قبل کی گئی جس سے پولیس نے بینک انتظامیہ کو آگاہ کردیا تھا۔

بینک لاکرز توڑنے کی تحقیقات میں ہوئے سنسنی خیز انکشافات  میں پتہ چلا ہے کہ ڈکیتی کا منصوبہ آٹھ ماہ پہلے بنا تھا، پولیس بھی باخبر تھی اور بینک انتظامیہ بھی۔

ذرائع کے مطابق ایس آئی یو کے شکنجے میں 8 ماہ قبل پارا چناری گروپے کے 8 بینک ڈکیت پھنسے تھے اور نجی بینک کے لاکرز کو لوٹنے کے منصوبے کا انکشاف کیا تھا، جس کیلئے انہوں نے سیکیورٹی گارڈ کی مدد سے لاکرز کی ڈپلیکیٹ چابیاں بھی بنالی تھیں۔

پولیس کا کہنا تھا کہ بینک انتظامیہ کو آگاہ کردیا گیا تھا اور گارڈ تبدیل کرنے کا مشورہ دیا تھا، مگر افسوس پھر پولیس نے توجہ دی نہ بینک انتظامیہ نے، غریبوں کی جمع پونجی ڈاکوؤں کے رحم وکرم پر چھوڑ دی گئی، غفلت کا عالم یہ کہ لاکرز روم کے سی سی ٹی وی ریکارڈنگ سسٹم بھی یکم اپریل سے خراب تھا، اب پولیس کو گھر کے بھیدی کی تلاش ہے۔ سماء

burger

eng

تفتیش

انکشافات

Tabool ads will show in this div