امتحان میں کم نمبر آنے پر نوجوان نے خود کشی کرلی

اسٹاف رپورٹ
لاہور : امتحانی نتائج درست نہ ہوں تو بورڈ حکام غلطی قرار دے کر جان چھڑا لیتے ہیں لیکن  کبھی کبھی اس غلطی سے دل برداشتہ  ہوکر طلبا زندگی ہی ختم کر لیتے ہیں۔

تعلیمی دور میں امتحانات میں فیل ہو جانے والے کئی افراد دنیا کے کامیاب ترین لوگوں میں شمار ہوتے ہیں جیسے ایلبرٹ آئن سٹائن، بل گیٹس اور اسٹیو جابز اسکی تازہ مثال ہیں لیکن بدقسمتی سے ہمارے ہاں نوجوان امتحان میں ناکامی پر دلبرداشتہ ہو کر خودکشی تک کا انتہائی قدم اٹھا لیتے ہیں ۔

لاہور کے علاقے قلعہ لکشمن سنگھ میں سترہ سالہ رہائشی شہزاد احمد نے انٹرمیڈیٹ کے امتحان میں کم نمبر آنے کے باعث دلبرداشتہ ہو کر خود کو گولی مار کر خودکشی کرلی۔ شہزاد احمد کے والد اب تک بیٹے کی ناگہانی موت کی خبر پر یقین کرنے کی کوشش کر رہے ہیں مگر جوان موت کو ماننا کب آسان ہوتا ہے۔

شہزاد احمد کے اہل خانہ اور محلے دار اب تک  اُس کی اچانک موت کو ماننے کو تيار نہيں، ان کے مطابق شہزاد تعلیم میں اچھا تھا۔

شہزاد احمد  تو چلا گیا تاہم اپنے پیچھے یہ سبق چھوڑ گیا کہ  جہاں اسٹوڈنٹس میں صبراوربرداشت بڑھانے کی ضرورت ہے وہی والدین کا بھی یہ فرض ہے کہ وہ اپنے بچوں سے  توقعات وابستہ کرکے انہیں کسی مشکل امتحان میں نہ ڈالیں۔ سماء

میں

پر

نے

protests

Tabool ads will show in this div