شوہرحضرات خبردار،بیویوں کیلئے آگیاجدید ہتھیار

watch1

تحریر:شاہد حسین

مشکوک حرکات والے شوہر حضرات خبردار ہوجائیں کیونکہ اب وہ جھوٹ بول کر کہیں اور نہیں جا سکیں گے۔ اب بیوی ان کے پل پل کی خبر اور قدم قدم پر نظر رکھ سکے گی۔ یہ سب ممکن ہو سکے گا ایک گھڑی کی مدد سے جسے لانچ تو بچوں کی سیکیورٹی کے لیے کیا گیا لیکن سوشل میڈیا پر کمنٹس سے اندازہ ہوتا ہے کہ خواتین اسے شوہروں پر نظر رکھنے کے لیے استعمال کرنے میں زیادہ دلچسپی رکھتی ہیں۔

watch3

اس گھڑی سے متعلق ویڈیو رپورٹ کو اکثر خواتین نے اپنی سہیلیوں کو ٹیگ کرکے شیئرکیا اور کمنٹس میں اسے خاوند کی نقل وحرکت پر نظر رکھنے کے لیے استعمال کا مشورہ دیا۔ مردحضرات نے اپنے دوستوں کو کمنٹس میں لکھا کہ کہیں یہ گیجیٹ انکی بیویاں نہ دیکھ لیں۔ کچھ نے یہ بھی لکھا کہ ڈرنے کی ضرورت نہیں۔ گھڑی کو اتار کر آفس کی دراز میں رکھ دینے سے مسئلہ حل ہو جائے گا۔ ایک خاتون نے اپنے خاوند کولکھا کہ آتے ہوئے یہ گھڑی لے کر آنا۔ کچھ نے بتایا کہ اس گھڑی سے چھیڑ چھاڑ ممکن نہیں کیونکہ دوسرے ممالک میں اسے جیل سے پیرول یا ضمانت پر رہا ہونے والے ملزمان پر نظر رکھنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔ اور ایک لڑکی نے تو یہ بھی لکھ ڈالا  کہ اس کی پینتالیس سالہ امی اس کے اکیاون سالہ ابو کے لیے یہ گھڑی خریدنے کی خواہش مند ہیں۔

اگر کوئی یہ سوچتا ہے کہ یہ گھڑی دراز میں رکھ کرجہاں مرضی جا یاجاسکتا ہے تو یہ تھوڑا سا مشکل ہے ۔ اس گھڑی میں سینسرز لگائے گئے ہیں۔ جیسے ہی اسے کلائی سے اتارا جائے تو یہ سینسرز خود بخود متحرک ہو جاتے ہیں اور ٹریکنگ کرنے والے موبائل پرایس ایم ایس بھیج دیا جاتا ہے ۔

watch2

اگرکوئی سینسرزکو بھی دھوکا دینے کا سوچ رہا ہے تو یہ ایک اورمشکل ہے۔ اس گھڑی میں کال کرنے کے ساتھ ساتھ موصول کرنے کا بھی آپشن ہے۔ لیکن گھڑی پہننے والا صرف تین نمبرز پر ہی کال کر سکتا ہے جو اس میں پہلے سے فیڈ کئے جاتے ہیں۔ فون کرکے یہ تصدیق بھی کی جا سکتی ہے کہ گھڑی کہیں دراز میں تو نہیں۔

اس گھڑی کا اہم فیچر فینسنگ ہے۔ گوگل میپ پر راستے اور منزل پر نشان لگائے جا سکتے ہیں۔ تو 'بتانا کچھ اور جانا کہیں اور' بھی مشکل ہے۔ کیونکہ جیسے ہی بچہ یا بڑا اپنے  راستے سے ہٹے گا تو فورا ایس ایم ایس موبائل پر بھیج دیا جاتا ہے۔ اور اگر دیکھنا ہو کہ بڑے یا چھوٹے صاحب تمام دن کہاں کہاں رہے تو صرف Play کا بٹن دبانے سے تمام دن کی نقل و حرکت بھی خلاصے کی طرح سامنے آجائے گی۔

watch5

بلا شبہ اب وہ دورنہیں رہاجب بچے صبح سے شام کہیں بھی کھیلتے رہتے تو والدین کو تشویش نہیں ہوتی تھی۔ آج تو بچے نظروں سے تھوڑی دیر کے لئے اوجھل ہو جائیں تو والدین  پریشان ہو جاتے ہیں۔ میری طرح شاید تمام والدین بچوں کے معاملے میں اتنے ہی حساس ہوتے ہیں۔ اسکول سے ذرا سا لیٹ ہو جائیں یا گھر سے باہر کھیلنے کے لئے نکل جائیں تو والدین کی بھاگ دوڑ شروع ہو جاتی ہے۔ یہ نئی ٹیکنالوجی یقیننا ہماری پریشانی کسی حد تک کم کر دے گی۔ بچے نظروں سے دور ہو کر بھی دور نہیں ہوں گے اور والدین ہر وقت ان پر نظر رکھ سکیں گے۔

ساتھ ہی ساتھ شوہرحضرات کی جانب سے تشویش میں مبتلا بیویاں بھی اس سے مستفید ہوسکتی ہیں جس سے بیویوں کے تو پرسکون دن شروع ہوجائیں گے البتہ شوہروں کے دل کاحال وہی جانیں۔

new technology

fencing

tracker

Tabool ads will show in this div