اسلام آباد کا ڈی چوک میدان جنگ بن گیا، آمنہ جنجوعہ، دیگر مظاہرین گرفتار

Nov 30, -0001

اسلام آباد: اسلام آباد میں لاپتا افراد کے رشتے داروں نے احتجاج کیا توپولیس ٹوٹ پڑی۔۔ لاٹھی چارج اور آنسوگیس کی شیلنگ سے ڈی چوک میدان جنگ بن گیا۔

ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کی چیئرپرسن آمنہ مسعود جنجوعہ سمیت بارہ سے زائد مظاہرین کوگرفتارکر لیا گیا۔

لاپتا افراد کے پُرامن لواحقین کا ڈی چوک پر احتجاج ۔ مظاہرین میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے۔

مظاہرین نے مطالبات کی شنوائی کیلئے پارلیمنٹ ہاؤس جانے کی کوشش کی تو پولیس نے اندھا دھند لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ کرکے ڈی چوک کو میدان جنگ میں بدل دیا۔

پولیس نے مظاہرین کو بالوں سے پکڑ پکڑ کر گھسیٹا ۔ آمنہ مسعود جنجوعہ اور خواتین اہل کاروں میں ہاتھا پائی بھی ہوئی' پولیس کے بیہیمانہ لاٹھی چارچ سے کئی مظاہرین اور دو کیمرا مین بھی زخمی ہوئے ۔ ‫پولیس نے ڈی چوک میں لا پتا افراد کے لواحقین کا کیمپ بھی اکھاڑ دیا۔

‏‪‫مظاہرین سے جھڑپ میں ایک پولیس اہلکار بھی زخمی ہوا۔

پولیس نے مظاہرین کی درگت بنانے کے بعد ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کی چیئرپرسن آمنہ مسعود جنجوعہ سمیت دو خواتین اور بارہ افراد کو گرفتار کر لیا جنہیں مخلتف تھانوں میں بھیج دیا گیا ہے۔ سماء

Tabool ads will show in this div