قومی اسمبلی، پی آئی اے کی کمپنی میں تبدیلی اور ٹیکس ایمنسٹی بل منظور

Jan 21, 2016

christians-in-pakistan-national_assembly21

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/01/NA-2-Bill-Pass-Isb-Pkg-21-01.mp4"][/video]

اسلام آباد : اپوزیشن احتجاج کرتی رہ گئی، حکومت نے اکثریت کا فائدہ اُٹھا کر کالا دھن سفید کرنے اور پی آئی اے کو کمپنی بنانے کے متنازع بل منظور کرالئے، حزب اختلاف کا کہنا ہے کہ قانون سازی کا عمل بری طرح بلڈوز کیا گیا۔

یک نہ شد دو شد، اپوزیشن ابھی ٹیکس ایمنسٹی بل پر احتجاج سے فارغ نہ ہوئی تھی کہ حکومت ایک اور متنازع بل لے آئی، حزب اختلاف نے شدید ہنگامہ آرائی اور واک آؤٹ کرتے ہوئے احتجاجاً پی آئی اے کو کمپنی بنانے اور کالا دھن سفید کرنے کے بلوں کی کاپیاں پھاڑ دیں۔

ایوان میں اسد عمر کو بل پر بات کرنے کی اجازت نہ دینے پر حزب اختلاف کے دیگر ارکان نے بھی احتجاج کیا، حکومتی اراکین کی تقاریر کے دوران اپوزیشن اراکین نو نو کے نعرے لگاتے رہے۔

اپوزیشن جماعتوں نے بل کی مخالفت کی، رہنماؤں کا کہنا تھا کہ یہ بل پارلیمنٹ کو تقسیم کردے گا۔

اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے کہا کہ بل سے چوری کا کلچر پروان چڑھے گا، اٹک قلعے میں بہائے گئے آنسوؤں کا واسطہ کالے دھن والوں کے بجائے عوام کا سوچا جائے۔

جماعت اسلامی نے شریف خاندان کے اثاثوں کی تفصیل پارلیمنٹ میں پیش کرنے کا مطالبہ کردیا۔ سماء

PTI

National Assembly. Tax Amnesty Scheme

PIA Company

Opposition Protest

Tabool ads will show in this div