مزید 10انسداد دہشت گردی کی عدالتیں جلد کام شروع کردینگی، مولابخش چانڈیو

Jan 19, 2016
[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/01/Mola-Bux-Court-Sot-19-01.mp4"][/video] Mola Bux Court Sot 19-01 کراچی : صوبائی وزیر مولا بخش چانڈیو کا کہنا ہے کہ اب تک پچیس مقدمات کو فوجی عدالتوں میں بھیجا گیا ہے، جب کہ مزید دس فوجی عدالتوں کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے، سی پیک کیلئے دو ہزار اہل کاروں کی فورس تیار کی جائے گی۔ وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کی زیر صدارت ہونے والے اپیکس کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ دس فوجی عدالتیں کچھ ہفتوں میں کام شروع کردیں گی،جب کہ سی پیک کیلئے دو ہزار اہل کاروں کی فورس تیار کی جائے گی۔ مزید پڑھیںوزیراعلیٰ اور ایپکس کمیٹی کا اجلاس مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں کئی چیزوں کا جائزہ لیا گیا، اجلاس خوشگوار ماحول میں ہوا، سندھ کے دشمن آج مایوس ہوئے ہیں،پچیس مقدمات فوجی عدالتوں میں بھیجے گئے ہیں، جبکہ تین کیسز پر کام مکمل ہوگیا ہے، خالد محمود سومرو کا کیس بھی فوجی عدالت میں بھیجا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میں جرائم کی شرح میں کافی حد تک کمی ہوئی ہے، گواہوں کے تحفظ کیلئے سیف ہاوسز بنائے جائیں گے صرف مجرم نہیں مجرموں کے ماسٹر مائنڈ کا بھی پیچھا کیا جائے گا۔ چوہدری نثار سے متعلق پوچھے گئے سوال کے جواب میں مولا بخش کا کہنا تھا کہ چوہدری نثار کو اپنا وزیر داخلہ مانتے ہیں، چوہدری نثار سندھ آئیں گے،تو خوش آمدید کہیں گے۔ واضح رہے کہ وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد، ڈی جی رینجرز بلال اکبر، صوبائی وزیرداخلہ سہیل انور سیال اور وزیر خزانہ سمیت مشیر قانون شریک ہوئے۔ سماء

APEX COMMITTEE

military courts

Tabool ads will show in this div