الیکشن کمیشن کا ریٹرننگ افسران پر مکمل اختیار نہ ہونے کا اعتراف

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : عام انتخابات میں ریٹرنگ افسران کے کردار پر مختلف سیاسی جماعتوں کی سخت تنقید کے بعد الیکشن کمیشن نے انتخابات میں ریٹرنگ افسران پر مکمل اختیار نہ ہونے کا اعتراف کرلیا، آئندہ انتخابات کیلئے حکومت سے مزید اختیارت مانگ لئے۔

سماء کو ملنے والی دستاویز کے مطابق الیکشن کمیشن نے گزشتہ ماہ حکومت کو بھیجے گئے انتخابی اصلاحات پیکیج میں اعتراف کیا ہے کہ عام انتخابات میں ریٹرننگ افسران الیکشن کمیشن کے مکمل اختیار میں نہیں تھے، ریٹرننگ افسران کی جانب سے آخری لمحات میں پولنگ اسٹیشن کی تبدیلی سے ووٹرز متاثر ہوئے، ریٹرننگ افسران کی تعیناتی کا مستقل حل ہونا چاہئے۔

دستاویز کے مطابق الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات کو زیادہ شفاف بنانے کیلئے پارلیمنٹ سے مزید اختیارات مانگے ہیں، ای سی پی کا کہنا ہے کہ اگر عام انتخابات میں دھاندلی ہوئی بھی تو الیکشن کمیشن ریٹرنگ افسران کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کرسکتا، آر اوز پر الیکشن کمیشن کے مکمل اختیار کیلئے حکومت قانون سازی کرے۔

ذرائع کے مطابق ای سی پی بھارت اور بنگلہ دیشی الیکشن کمیشن کی طرح مستقل بنیادوں پر خود ریٹرننگ افسران کی تعیناتی چاہتا ہے، جن کیخلاف وقت پڑنے پر کارروائی بھی کی جاسکے، عام انتخابات سے قبل تحریک انصاف سمیت مخلتف سیاسی جماعتوں نے عدلیہ سے ریٹرننگ افسران لینے کا مطالبہ کیا تھا۔ سماء

پشاور

مکمل

paper

افسران

crowned

Tabool ads will show in this div