تحریک انصاف کے خفیہ اکاﺅنٹس کیلئےعالمی بینکس کوخط لکھنے کافیصلہ

عمران خان کے آمدن کی جانچ پڑتال کرانے کا بھی فیصلہ
May 05, 2022

وفاقی حکومت نے تحریک انصاف اور چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے خفیہ اکاﺅنٹس کیلئے عالمی بینکس کو خطوط لکھنے کا فیصلہ کرلیا۔

ذرائع کے مطابق جن عالمی بینکوں کو خطوط بھیجے جائیں گے ان میں امریکا، برطانیہ، کینیڈا، ناروے، فن لینڈ، نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے بینکس شامل ہیں۔

کارروائی اسحاق ڈار دور کے ڈیٹا ایکسچینج معاہدے کے تحت کی جائے گی،مذکورہ معاہدے کے تحت ایف بی آرعالمی بینکس سے مذکورہ ریکارڈ لے سکتا ہے۔

دوسری جانب عمران خان کے مالی گوشواروں اور آمدن کی جانچ پڑتال کرانے کا بھی فیصلہ کرلیا گیا ہے، گوشواروں اور ریکارڈ کا تقابلی جائزہ لیکر قانونی کارروائی کی جائے گی، اسٹیٹ بینک سے ملازمین کے نجی اکاﺅنٹس کی رقوم کا ریکارڈ لیا جائیگا۔

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی سیکرٹریٹ کے4ملازمین کی بینک تفصیلات بھی لی جائیں گی، ملازمین میں طاہراقبال، نعمان افضل، محمدارشد اور محمد رفیق شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق حکومت نے پی ٹی آئی کی غیرقانونی فنڈنگ کی مزید تحقیقات کا بھی فیصلہ کیا ہے۔ پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کا2013  تا2021  کاریکارڈ منگوایا جائے گا، حالیہ پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں5سال کاریکارڈ موجود ہے، اسیٹیٹ بینک نے الیکشن کمیشن کو2008 تا2012کا ریکارڈ دیا تھا۔

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی کو2013کے بعد زیادہ مقدار میں غیرقانونی رقوم ملیں، ریکارڈسےپتہ چلے گا کہ دھرنے میں کس کس نے کتنے پیسے دیے، آزاد آڈیٹرز کے ذریعے بینک ریکارڈ کی فرانزک جانچ کرائی جائے گی، ایف آئی اے،ایف بی آراپنی اپنی سطح پرریکارڈ لیکر کارروائی کرینگے۔

Tabool ads will show in this div