وزیراعظم نے بجلی کی لوڈشیڈنگ کانوٹس لے لیا،کمی کی ہدایت

عمران حکومت نے ایک نیایونٹ سسٹم میں شامل نہیں کیا
Apr 24, 2022

وزیراعظم شہبازشریف نے ملک میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں تشویشناک حد تک اضافے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے حکام کو حکم دیا کہ اگلے ماہ تک لوڈ شیڈنگ میں نمایاں کمی کیلئے اقدامات کئے جائیں۔

ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں غیر معمولی اضافے پر وزیراعظم شہباز شریف برہم ہوگئے۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو آئندہ ماہ (مئی تک) لوڈشیڈنگ میں نمایاں کمی کرنے کا حکم دے دیا۔

شہباز شریف کا کہنا ہے کہ لوڈشیڈنگ کے خاتمے تک چین سے بیٹھوں گا نہ کسی کو بیٹھنے دوں گا، سابق حکومت کی مجرمانہ غفلت کے باعث شہری مشکلات کا شکار ہیں۔

وزیراعظم نے نے تیل و گیس کا بندوبست ہونے تک عبوری اقدامات کو بہتر بنانے کی بھی ہدایت کردی۔ انہوں نے کہا کہ عمران حکومت نے بجلی کا ایک نیا یونٹ سسٹم میں شامل نہیں کیا، بروقت ایندھن خریدا گیا نہ کارخانوں کی مرمت کی گئی۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نوازشریف حکومت نے ملک میں اضافی بجلی کی وافرمقدار فراہم کی تھی، سابقہ حکومت نے ہمارے دور کے سستی اور تیز ترین بجلی پیدا کرنے والے پلانٹ بند کئے، مہنگی اور کم بجلی بنانے والے کارخانے استعمال کئے گئے۔

انہوں ںے کہا کہ اس ظلم کی قیمت قوم کو ہر ماہ 100 ارب روپے کی شکل میں ادا کرنا پڑرہی ہے، 6 ارب میں ایل این جی کا جو ایک جہاز مل رہا تھا، وہ قوم کو 20 ارب میں پڑرہا ہے، توانائی کے شعبے کی تباہی کرکے پاکستان کی معیشت دیوالیہ کرنے کی سازش کی گئی۔

Tabool ads will show in this div