تنویرالیاس خان نے وزیراعظم آزاد کشمیر کا حلف اٹھالیا

وہ آزاد کشمیر کے 14ویں وزیراعظم ہیں

سردار تنویر الیاس خان نے آزاد جموں و کشمیر کے 14 ویں اعظم کی حیثیت سے حلف اٹھالیا۔ سابق وزیراعظم عبدالقیوم نیازی نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے استعفیٰ کے چند روز بعد اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا تھا۔

سردار تنویر احمد بلا مقابلہ وزیراعظم آزاد کشمیر منتخب ہوئے، اپوزیشن جماعتوں مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلزپارٹی نے انتخاب کا بائیکاٹ کیا، انہیں 53 کے ایوان میں 33 اراکین کی حمایت حاصل تھی، حکومتی اتحادی جماعت جموں کشمیر پیپلزپارٹی کے رکن نے وزیراعظم آزاد کشمیر تنویر الیاس سے ذاتی اختلافات کی بناء پر حکومتی بینچز سے علیحدگی اختیار کرلی۔

سردار عبدالقیوم نیازی کیخلاف ان کی اپنی جماعت کے اراکین نے تحریک عدم اعتماد لانے کا اعلان کیا تھا، جس پر انہوں نے پہلے ہی اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا تھا۔

آزاد کشمیر کے 48 سالہ نومنتخب وزیراعظم تنویر الیاس خان نے اپنے عہدے کا حلف اٹھالیا، ان سے صدر آزاد کشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے ایوان صدر میں حلف لیا گیا، تقریب میں سیاسی اور سماجی شخصیات سرکاری افسران اور پارٹی ورکرز نے بھی شرکت کی۔

وزیراعظم آزاد کشمیر سردار تنویر الیاس خان کا حلف اٹھانے کے بعد کہنا تھا کہ بھارت نے کشمیر کو ایک جیل میں تبدیل کردیا، آر ایس ایس کا کوئی مذہب نہیں وہ صرف انتہاء پسند ہیں، بھارت دنیا کو جنگ میں دھکیلنا چاہ رہا ہے، بھارت اس رویے سے خود تقسیم ہونے جارہا ہے، ہم نے 90 روز کا ہدف دیا ہے، آپ کو کشمیر بدلا ہوا نظر آئے گا۔

آزاد کشمیر کے منتخب 14ویں وزیراعظم سردار تنویر الیاس کون ہیں؟

سردار تنویر الیاس آزاد کشمیر کے ضلع پونچھ کے گاؤں بنگوئین میں 1974ء کو پیدا ہوئے۔

بزنس ایڈمنسٹریشن اور صحافت میں ماسٹرز اور ایل ایل بی کی ڈگری بھی حاصل کر رکھی ہے۔

 ان کے والد سردار الیاس خان سعودی عرب کے معروف کاروباری گروپ التمیمی کے چیئرمین ہیں۔

تنویر الیس خان کے چچا سردار صغیر چغتائی اسمبلی اور کشمیر کونسل کے رکن رہ چکے جو ایک سال قبل ایک حادثے میں جاں بحق ہوئے۔

 تنویر الیاس کا نام پہلی مرتبہ اس وقت سامنے آیا جب پاکستان کے بڑے مال سینٹورس کی اسلام آباد میں تعمیر شروع ہوئی، اس کے علاہ ریئل اسٹیٹ سمیت کئی کاروباری منصوبے کامیابی سے چلاکر ہزاروں افراد کو روزگار مہیا کر رہے ہیں۔

پاکستان کی سیاسی قیادت، عسکری اور کاروباری حلقوں سے بھی ان کے اچھے تعلقات ہیں۔

پنجاب کی 2018ء کی نگراں کابینہ میں بطور وزیر شامل رہے، پنجاب میں بننے والی تحریک انصاف کی کابینہ میں بھی ان کو شامل کرکے چیئرمین انویسٹمنٹ بورڈ کا عہدہ دیا گیا۔

صدر تحریک انصاف آزاد کشمیر بیرسٹر سلطان محمود کے صدر آزاد کشمیر بننے کے بعد تنویر الیاس خان تحریک انصاف آزاد کشمیر کے صدر بن گئے۔

کاروباری اور سماجی خدمات پر کئے ایوارڈ اور اعزاز حاصل کرچکے ہیں، جن میں اقوام متحدہ سے کاروباری خدمات اور صدر پاکستان سے سماجی خدمات کے ایوارڈ بھی شامل ہیں۔

انہوں نے اپنے گاؤں میں اُم الیاس کے نام سے ایک اسپتال بھی قائم کیا ہے جبکہ کئی دیگر رفاہی اداروں کی بھی معاونت کرتے ہیں۔

سردار تنویر الیاس آزاد کشمیر میں کاروبار، سیاحت، زراعت، پن بجلی کے شعبوں کی ترقی اور اصلاحات میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

تنویر الیاس کے پاس اپنا ہیلی کاپٹر بھی ہے، اس لئے ان کو کچھ لوگ آزاد کشمیر کا جہانگیر ترین بھی کہتے رہے ہیں۔

PM TANVEER ILYAS KHAN

Tabool ads will show in this div