بلوچستان،گورنر ہاؤس میں آسامیوں پر تعیناتیاں روک دی گئیں

گورنر عہدے سے استعفیٰ دے چکے ہیں

بلوچستان ہائی کورٹ نے گورنر ہاؤس میں مختلف آسامیوں پر تعیناتیاں روکنے کا حکم جاری کیا ہے۔

بلوچستان ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نعیم اختر افغان کی جانب سے تعیناتیاں روکنے کا حکم دیا گیا ہے۔ بلوچستان ہائی کورٹ میں شہری عبدالصمد کی جانب سے درخواست دائر کی گئی تھی۔

درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی تھی کہ گورنر بلوچستان کے دفتر کیلئے مختلف آسامیوں پر اسسٹنٹ ، باروچی، اے سی ٹیکنیشن اور ویٹر کو بھرتی کرنے کیلئے صرف دو دن کا وقت دیا گیا ہے۔

درخواست گزار کے مطابق دو دنوں میں بلوچستان کے دور دراز سے بے روزگار نوجوان نہ تو اپنی درخواست جمع کراسکتے ہیں اور نہ ہی وہ انٹرویو دے سکتے ہیں۔

درخواست میں عدالت سے استدعا کرتے ہوئے کہا گیا کہ گورنر بلوچستان سید ظہورآغا اپنے عہدے سے بھی استعفاء دے چکے ہیں اور یہاں جلد بازی میں نئی بھرتیاں کرنا چاہتے ہیں۔ عدالت نے درخواست پر فیصلہ دیتے ہوئے حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے تعیناتیاں روک دیں۔

HIGH COURT B

GOVERNOR B

Tabool ads will show in this div