جنوبی وزیرستان میں جھڑپ، 2دہشت گرد ہلاک، 2جوان شہید

علاقےمیں دہشت گردوں کیخلاف کلیئرنس آپریشن جاری ہے،ترجمان
Apr 12, 2022

پاک فوج نے جنوبی وزیرستان میں آپریشن کے دوران کئی سنگین وارداتوں میں ملوث 2 انتہائی مطلوب دہشتگرد ہلاک کردیئے، بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد کرلیا۔ جھڑپ کے دوران 2 جوانوں نے بھی جام شہادت نوش کیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق جنوبی وزیرستان کے علاقے انگور اڈا میں پاک فوج کے آپریشن کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں 2 انتہائی مطلوب دہشتگرد ہلاک ہوگئے جبکہ سیکیورٹی فورسز کے 2 جوان بھی شہید ہوگئے۔

ترجمان پاک فوج کی جانب سے جاری معلومات کے مطابق ٹوبہ ٹیک سنگھ سے تعلق رکھنے والے 30 سالہ میجر شجاعت اور نصیر آباد کے رہائشی 27 سالہ سپاہی عمران خان شہداء میں شامل ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق انگور اڈہ میں پاک فوج کے آپریشن کے دوران دہشتگردوں نے بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا، جس پر فورسز کی جانب سے بھرپور جواب کارروائی کی گئی، کارروائی کے دوران دہشت گردوں کی پناہ گاہ سے بھاری مقدار میں گولہ بارود برآمد کرلیا گیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق علاقے میں ممکنہ طور پر روپوش مزید دہشتگردوں کے خاتمے کیلئے کلیئرنس آپریشن جاری ہے۔ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ پاک فوج دہشت گردی کے مکمل خاتمے کیلئے پُرعزم ہے، مادر وطن کے دفاع کیلئے دی جانیوالی قربانیاں سیکیورٹی فورسز کے عزم و حوصلہ مضبوط تر بناتی ہیں۔

وزیراعظم شہباز شریف نے انگور اڈہ میں دہشت گردوں کے حملے کی مذمت کرتے ہوئے شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ شہداء کی قربانیاں دہشتگردی کيخلاف پاکستان کے پختہ عزم کا ثبوت ہیں، اللہ تعالی شہداء کے درجات بلند فرمائے اور اہل خانہ کو صبر جمیل دے۔

south Waziristan