سردار عثمان بزدار پنجاب اسمبلی پہنچ گئے

ن لیگی کارکنوں نے نعرے لگائے
Apr 02, 2022

مستعفیٰ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار صوبائی اسمبلی پہنچ گئے۔

اسمبلی آمد پر صحافی اور کارکنان ان کے اطراف جمع ہوگئے۔ میڈیا سے گفتگو میں سردار عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ میں خان کا سپاہی ہوں۔ انشا اللہ سب اچھا ہوگا۔

اس موقع پر ن لیگی کارکنوں کی جانب سے شیر شیر کے نعرے بھی لگائے گئے اور ایوان نعروں سے گونج اٹھا۔ اسمبلی ہال میں حکومتی خالی بینچز دیکھ کر اپوزیشن کی جانب سے شدید احتجاج بھی کیا گیا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل عثمان بزدار نے وزارت عظمیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دیا تھا، جس کے بعد گورنر نے ان کا استعفیٰ گزشتہ روز جمعہ یکم اپریل کو منظور کیا تھا۔

چوہدری سرور کی جانب سے عثمان بزدار کے استعفے کی منظوری پر دستخط کے بعد کابینہ تحلیل ہوگئی ہے، جب کہ پنجاب اسمبلی کا اجلاس بھی طلب کیا گیا ہے، جس میں نئے قائد ایوان کے انتخاب کا مرحلہ شروع ہوگا۔

دو اپریل کو طلب کیے گئے اجلاس میں وزیراعلیٰ کے انتخاب کا شیڈول جاری کیا جائے گا۔ کاغذات نامزدگی اسمبلی میں جمع ہوں گے۔ جانچ پڑتال کے بعد ووٹنگ کی تاریخ کا اعلان ہوگا، جو کہ اتوار کے روز ہونے کا امکان ہے، پنجاب اسمبلی کے ایوان میں اوپن ووٹنگ کے ذریعے نئے وزیراعلیٰ کا انتخاب ہوگا۔

اسمبلی سیکریٹریٹ تمام اقدامات کے لئے قانونی عمل کا رولز کے مطابق اہتمام کرے گا۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ سابق وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے 20 اگست 2018 کو حلف اٹھایا۔ 2018 کے عام انتخابات میں پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر الیکشن لڑا، 2018 میں پہلی بار رکن پنجاب اسمبلی منتخب ہوتے ہی وزیراعلیٰ پنجاب بن گئے۔ عثمان بزدار 2018 کے عام انتخابات سے پہلے جنوبی پنجاب صوبہ محاذ کا حصہ رہے۔

عثمان بزدار 2001 میں مسلم لیگ ق کا حصہ بنے، عثمان بزدار 2001 سے 2008 تک تونسہ کے تحصیل ناظم رہے، 2013 میں پہلی بار پنجاب اسمبلی کا الیکشن لڑا لیکن کامیاب نہ ہوسکے، 2013 میں مسلم لیگ ن میں شامل ہوئے، 2013 کے عام انتخابات میں پی پی 241 سے قسمت آزمائی کی، 2013 میں ن لیگ کے پلیٹ فارم سے الیکشن لڑا لیکن کامیاب نہ ہوسکے۔

PTI

PUNJAB

IMRAN KHAN

USMAN BUZDAR

Tabool ads will show in this div