وزیراعظم آج کمالیہ میں جلسے سے خطاب کرینگے

وزیراعظم دن تین بجے خطاب کرینگے

وزیراعظم عمران خان آج بروز ہفتہ 26 مارچ کو دن 2 بجے فیصل آباد کے قریب کمالیہ میں جلسے کیلئے روانہ ہوں گے۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار بھی ان کے ہمراہ ہونگے۔

وفاقی وزرا بھی وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ کمالیہ جلسے میں شرکت کریں گے۔ وزیراعظم کے خطاب اور جلسے کیلئے اسپورٹس گراؤنڈ میں تیاریاں آخری مراحل میں جاری ہیں۔ جلسے کے موقع پر وزیراعظم اہم اعلانات بھی کریں گے۔

عوام کی شرکت کیلئے جلسہ گاہ میں 20 ہزار کرسیاں لگائی گئی ہیں۔ خواتین کیلئے پنڈال میں علیحدہ جگہ مختص کی گئی ہے۔ شرکا واک تھرو گیٹ سے گزر کر جلسے میں شرکت کرینگے۔

پنڈال کو اندر اور اطراف سے بڑے بڑے بینرز اور پارٹی پرچم سے سجایا گیا ہے۔

ساہیوال ڈویژن سے بھی مقامی عہدے دار وزیراعظم عمران خان سے اظہار یکجہتی کیلئے جلسے میں شرکت کرینگے۔ وزیراعظم عمران خان ٹوبہ ٹیک سنگھ کی مختلف تحصیلوں کیلئے پروجیکٹس کا بھی اعلان کرینگے، جب کہ کمالیہ یونی ورسٹی کا سنگِ بنیاد اور ہڑپہ راوی پل کا افتتاح بھی کیا جائے گا۔

دوسری جانب عمران خان اتوار 27 مارچ کو پریڈ گراؤنڈ اسلام آباد میں بھی جلسہ کریں گے۔

اس حوالے سے وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا ہے کہ 27 مارچ کا جلسہ ضمیر فروشی اور کرپشن کی سیاست کو ختم کردے گا۔ اتحادی آج بھی حصہ ہیں اور کل بھی ہوں گے، آئندہ دنوں میں اچھی خبریں سننے کو ملیں گی۔

قبل ازیں مالاکنڈ جلسے پر الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ضابطہ اخلاق کی خلاف وزری کرتے ہوئے بلدیاتی انتخابات کیلئے جلسے سے خطاب کرنے پر وزیراعظم عمران خان، وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان سمیت تین عہدیداران پر فی کس 50 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا تھا۔

مالاکنڈ کے ضلعی مانیٹرنگ افسر (ڈی ایم او) ضیاالرحمان کی جانب سے 5 الگ نوٹسز جاری کیے گئے جس میں وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ، وفاقی وزرا مراد سعید اور علی حیدر زیدی اور صوبائی وزیر شکیل خان کو 27 مارچ تک جرمانہ جمع کروانے کی ہدایت دی گئی ہے۔ ضیاالرحمان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن ایکٹ 2017 کے سیکشن 234 (5) کے تحت وزیر اعظم سمیت دیگر وزرا کو 3 روز میں الیکشن کمیشن میں اپیل دائر کرنے کا اختیار حاصل ہے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ لوئر دیر اور سوات کے جلسے میں خطاب کرنے پر بھی وزیر اعظم عمران خان سمیت دیگر پانچ وزرا پر فی کس 50 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا تھا۔

دو روز قبل مالاکنڈ کے ڈی ایم او کی جانب سے پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو بھی نوٹس بھیجا گیا جس میں ان سے 25مارچ جلسے میں شرکت سے متعلق جواب طلب کیا گیا، انہوں نے مالاکنڈ میں جلسے میں شرکت کرتے ہوئے قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کی تھی۔

ECP

IMRAN KHAN

KAMALIA

Tabool ads will show in this div