رمضان نشریات کیسی ہونگی؟وفاقی وزیرِمذہبی امورنے قواعد کیلئے خط لکھ دیا

خط صدر اور وزیراعظم کو لکھا گیا ہے
خط صدر اور وزیراعظم کو لکھا گیا ہے
خط صدر اور وزیراعظم کو لکھا گیا ہے

Anti-Islamic slogans should not be allowed on International Women's Day,  Qadri writes to PM Imran - DAWN.COM

وفاقی وزیرِ مذہبی امور نورالحق قادری نے صدرِ پاکستان اور وزیرِ اعظم سے بذریعہ خط درخواست کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹی وی چینلز پر رمضان نشریات میں سحر اور افطار کے اوقات میں گیم شوز اور غیر سنجیدہ پروگرامز سے اجتناب کیے جانے کے احکامات صادر کریں۔

وزارت مذہبی امور کے مطابق بعض ٹی وی چینلز کی رمضان ٹرانسمیشن سے متعلق عوامی حلقوں کی جانب سے شکایات موصول ہوئی تھیں۔

صدرِ مملکت عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان کو لکھے گئے خط میں وفاقی وزیر نے کہا کہ معاشرے میں مذہبی و مسلکی ہم آہنگی کا فروغ رمضان نشریات کی اولین ترجیح ہونا چاہئے۔ رمضان نشریات میں متنازعہ مسائل اور مسلکی بحث سے ہر ممکن اجتناب کیا جائے۔

وفاقی وزیر مذہبی امور کا یہ بھی کہنا تھا کہ رمضان نشریات کے میزبان ضروری دینی و مذہبی علم سے آراستہ ہونے چاہئیں۔ سحر اور افطار کے اوقات میں گیم شو اور دیگر غیر سنجیدہ پروگرامز نشر کرنے سے اجتناب کیا جائے۔ ماہ رمضان میں بطور خاص غیر اخلاقی، غیر مناسب اشتہارات و پروگرام نشر کرنے پر پابندی لگائی جائے۔

انہوں نے تجویز دیتے ہوئے لکھا کہ ٹی وی چینلز کے میزبان اور مہمان ماہ رمضان کے تقدس کے مطابق لباس کا انتخاب کریں۔ تمام مقدس شخصیات اور مسالک کے ماننے والوں کا احترام ملحوظِ خاطر رکھا جانا چاہئے۔ وزیراعظم رمضان نشریات کے حوالے سے وزارتِ اطلاعات، پیمرا اور تمام ٹی وی چینلز کو مناسب ہدایات جاری کروائیں۔

Ramazan Transmission

Tabool ads will show in this div