دریائےراوی کا داغ داردامن

بڑھتی صنعتوں نے اس کےساتھ ظلم کیا

لاہور میں دریائےراوی کی لہریں بھی کبھی جھومتی اور گنگناتی تھیں تاہم پھر یہ آوازیں تھم گئیں اور راوی کا دامن داغ دارہوگیا۔

لاہور کا سب سے بڑا گندا نالہ دریائے راوی کو کہا جاتا ہے۔ یہ آج کی بات نہیں بلکہ برسوں کی کہانی ہےاور بڑھتی صنعتوں نے اس کےساتھ ظلم کیا ہے۔ کیمیائی فضلے نے دریا کو آلودہ کردیا ہے اورماحولیاتی تنظیمیں کی آوازیں بھی نہیں سنی گئی ہیں۔

نیو یارک یونیورسٹی نے دنیا کے دریاؤں میں موجود دوا سازی کی آلودگی کے متعلق تحقیق کی تو اس میں دریائے راوی کا پہلا نمبر تھا۔

تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ راوی کے پانی میں پیرا سیٹا مول ، نیکوٹین ، کیفین ، مرگی  کی ادویات سمیت کئی اجزا خطرناک حد تک موجود ہیں۔ان اجزا کی مقدارستراعشاریہ آٹھ مائیکروگرام فی لیٹر ہے اوراس کی تصدیق محکمہ ماحولیات نے بھی کی ہے۔

 راوی کی آلودگی کا بڑا موجب ہڈیارہ نالہ ہےجوشہربھرکا گندا فضلہ اکٹھا کر کے دریا کوتباہ کررہا ہے۔

POLLUTION

River Ravi

Tabool ads will show in this div