کنگنا سے موازنے پرعالیہ بھٹ کاردعمل

گنگوبائی کاٹھیاواڑی کی کاسٹ پرعالیہ کادوٹوک موقف

عالیہ بھٹ نےسنجے لیلا بھنسالی کی آنے والی سوانحی فلم ' گنگوبائی کاٹھیاواڑی ' کےمرکزی کردارمیں خود کو کاسٹ کیے جانے سے متعلق ابتدائی خدشات پرکھل کر بات کی ہے۔

گنگوبائی کاٹھیاواڑی کی ریلیز سے قبل تشہیری مہمات زوروں پرہیں، فلم نےجرمن فیسٹول برلینالے 2022 میں بھی جگہ بنا لی ہے۔ یہ فلم بھارتی مصنف حسین زیدی کی کتاب ' دی مافیا کوئینز' پرمبنی ہے جسے 25 فروری 2022 کو ریلیز کیا جائے گا، عالیہ کے اس پراجیکٹ کو سال 2022 کی سب سے زیادہ منتظرفلموں میں سے ایک کہا جارہا ہے۔

ایک حالیہ انٹرویو میں عالیہ سے پوچھا گیا کہ گنگوبائی میں ان کی اداکاری کا موازنہ اضی میں کیے گئے کنگنا رناوت اورودیا بالن کے کرداروں سے کیا جا رہا ہے،جس پرعالیہ نے یہ کہہ کرسوال نمٹا دیا کہ ، 'نہیں، میں نے ایسا کچھ نہیں سُنا'۔

عالیہ کا کہناتھا کہ، 'ہاں، لوگوں نے ضرور کاسٹ کے حوالے سے مشورہ دیا ہوگا لیکن مجھے لگتا ہے کہ کسی کو اس میں نہیں آنا چاہیے۔ کوئی ایسا ڈائریکٹر جو 25 سال سے کام کررہا ہے، ظاہر ہے کہ جانتا ہے مرکزی کردارمیں کسے کاسٹ کرنا ہے، مجھے ان لوگوں سے کوئی مسئلہ نہیں جو یہ سمجھتے ہیں کہ میں اس کردار کے لیے موزوں نہیں کیونکہ یہ ان کا اپنا نقطہ نظرہے'۔

کنگنا رناوت کئی مواقع پرعالیہ بھٹ کو نشانہ بنا چکی ہیں، گزشتہ سال اپنی سوانحی فلم ' تھلائیوی' کی تشہیرکے دوران کنگنا نے گنگوبائی کاٹھیاواڑی میں عالیہ کی کاسٹنگ پر طنزکرتے ہوئے انہیں 'چھوٹا بچہ بطور گینگسٹر' کہا تھا تاہم عالیہ کنگنا کی مسلسل تنقید کو براہ راست لینے سے گریزہی برتتی ہیں۔

گجرات کےعلاقے کاٹھیاواڑکے معتبر گھرانے سے تعلق رکھنے والی گنگو بائی والد کے اکاؤنٹینٹ رمنیک لال کی محبت میں خاندان کی مخالفت پر گھرسے بھاگ گئیں تھیں لیکن ہوا کچھ یوں کہ محبوب نے دھوکے سے انہیں جسم فروشی کا دھندہ کرنے والوں کے ہاتھ صرف 500 روپے میں فروخت کردیا۔

واپسی کے تمام راستے مسدود پاکرممبئی کے قحبہ خانوں میں حالات کی چکی میں پستے پستے گنگو ایک مضبوط ترین عورت بن کرابھری جہاں سب اسے میڈم کہہ کرپکارنے لگے۔ اپنے پیشے سے وابستہ خواتین کی زندگیاں بہتر بنانے کیلئے کوشاں گنگو بائی کا کردار اس حوالے سے خاصا متاثرکن سمجھاجاتا ہے۔

Alia bhatt

Kangna Ranaut

Gangubai Kathiawadi

Tabool ads will show in this div