پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا قوی امکان

 عالمی مارکیٹ میں خام تیل 7 سال کی بلندترین سطح پر پہنچ گیا
Feb 12, 2022

عالمی مارکیٹ میں خام تیل 7 سال کی بلند ترین سطح 94 ڈالر کی سطح پر پہنچ گیا، جس کے بعد پاکستان میں بھی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید اضافے کا قومی امکان پیدا ہوگیا ہے۔

پاکستان میں حکومت ہر 15 روز بعد پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر نظر ثانی کرتی ہے اور یکم اور 16 تاریخ کو نئی قیمتوں کا اطلاق ہوتا ہے۔

 عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت بڑھنے کی رفتار میں جمعہ کو تیزی آگئی جو ہفتہ کو بھی برقرار رہی، جس کے نتیجے میں خام تیل کی قیمت میں 3 فیصد سے زائد اضافہ ہوگیا اور ڈبیلو ٹی ایل 93.10 ڈالر فی بیرل جبکہ برینٹ خام تیل 95 ڈالر فی بیرل کی سطح پر پہنچ گیا، اگرچہ بعد میں کچھ ریکوری بھی آئی اور برینٹ خام تیل 94.44 ڈالر فی بیرل ہوگیا، خام تیل کی یہ قیمت گزشتہ 7 سال کی بلند ترین سطح ہے۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے میں اوپیک ممالک کے تیل کی قیمت بھی 1.12 فیصد اضافے سے 93 ڈالر کی بلند سطح پر دیکھی گئی۔

خام تیل کی قیمت بڑھنے کے اس رجحان کو ماہرین روس اور یوکرین کے مابین کشیدہ حالات کو قرار دے رہے ہیں، جس کے نتیجے میں خدشات ظاہر کئے جارہے ہیں کہ روس سے یورپ کو تیل کی سپلائی متاثر ہوسکتی ہے۔

اس سلسلے میں بعض رپورٹس میں اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ روس اور یوکرین میں معاملات خراب ہونے کی صورت میں خام تیل 100 ڈالر فی بیرل کی سطح کو بھی عبور کرسکتا ہے لیکن دوسری جانب امریکا اور ایران کے مابین نیوکلیر پروگرام کے حوالے سے مذاکرات میں مثبت پیشرفت سے تیل کی 13 لاکھ بیرل یومیہ سپلائی بڑھ جائے گی، جس سے تیل کی قیمتوں کو نیچے لانے میں معاون ثابت ہوسکتی ہیں۔

انٹرنیشنل انرجی ایجنسی (آئی ای اے) کی جانب سے جمعہ کو ایک بیان سامنے آیا کہ اوپیک ممالک کے بڑے تیل پیداواری ممالک سعودی عرب اور یو اے ای اگر تیل کی پیداوار میں اضافہ کردیں تو یومیہ 25 لاکھ بیرل تیل کی سپلائی بڑھنے سے قیمت میں کمی آسکتی ہے۔

عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتیں بڑھنے کا اثر مقامی طور پر بھی متوقع ہے اور 16 فروری کو حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کا اعلان ہوگا، جس میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا قوی امکان ہے۔

واضح رہے کہ یکم فروری کیلئے تیل کی قیمتوں کے تعین میں پیٹرولیم ڈیولپمنٹ لیوی اور سیلز ٹیکس کی شرح کم رکھ کر تیل کی قیمتوں میں اضافہ صارفین پر منتقل نہیں کیا گیا تھا لیکن 16 فروری کو اعلان ہونیوالے نرخوں کو بغیر کسی تبدیلی کے برقرار رکھنا مشکل ہوگا۔

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین بھی اسی تناظر میں چند روز قبل تیل کی قیمتوں میں اضافے کا عندیہ دے چکے ہیں، انرجی شعبے سے منسلک افراد کا کہنا ہے کہ تیل کی قیمت میں 5 سے 6 روپے فی لیٹر تک اضافے کا امکان ہے۔

پیٹرول کی قیمت

پاکستان

خام تیل

Tabool ads will show in this div