امریکا میں 9 ہزار پروازیں منسوخ

ڈیلاس فورٹ فورتھ انٹرنیشنل ایئرپورٹ بھی متاثر
Feb 06, 2022

امریکا کی متعدد جنوبی اور شمال مشرقی ریاستوں میں شدید برفانی کے باعث 9 ہزار پروازیں منسوخ کردی گئی ہیں۔

امریکی نشریاتی ادارے سی این این کے مطابق شدید طوفان کی وجہ سے 4لاکھ کے قریب مکانات اور کاروباری مراکز بجلی سے محروم ہیں۔ رپورٹس کے مطابق شدید طوفان سے 9 کروڑ لوگ متاثر ہوئے ہیں۔

 مصروف ڈیلاس فورٹ فورتھ انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر ایک ہزار سے زائد پروازوں میں خلل پڑا ہے۔

امریکا میں نیو میکسیکو سے مین تک کا علاقہ اس طوفان کی زد میں ہے جو وسطی امریکہ سے مزید جنوب اور شمال کی جانب بڑھ رہا ہے۔ جنوبی روکیز سے شمالی نیو انگلینڈ کے درمیان شدید برف باری کی توقع کی جارہی ہے جب کہ پیش گوئی ہے کہ ٹیکساس سے پنسلوانیا تک بھاری برف باری کا امکان ہے ۔

ایک طرف برفانی طوفان تھا تو دوسری جانب مغربی الاباما میں گرم موسم کے باعث جھکڑوں اور ٹارنیڈوز نے تباہی پھیلائی۔

جمعے کو بہت سے علاقوں میں بارش اور شدید سردی کی وجہ سے تعلیمی ادارے بند کر دیے گئے ۔ بہت سے علاقوں میں ایک فٹ سے لے کر پونے دو فٹ تک برفباری ہو چکی ہے۔ فضائی پروازوں کا حساب رکھنے والی کمپنی "فلائٹ اویر" کے مطابق، جمعرات اور جمعے کو امریکہ میں نو ہزار سے زیادہ پروازیں منسوخ کی گئی ہیں۔

ٹیکساس میں منجمد کرنے والی سردی معمول کی بات نہیں ہے۔ جمعے کو ٹیکساس کے پندرہ ہزار مکانات بجلی سے محروم ہیں۔

ریاست میری لینڈ کے شہر کالج پارک میں قائم نیشنل ویدر سروس کے ماہر موسمیات اینڈریو اور یسن نے جمعرات کو بتایا کہ ریاست کا ایک بڑاعلاقہ برف سے ڈھک سکتا ہے اوروسیع علاقے میں برف پڑنے کے ساتھ ساتھ مزید برفانی بارش بھی متوقع ہے۔

اوریسن نے بتایا کہ ریاست اوہائیو، نیویارک اور شمالی نیو انگلنڈ کے کچھ حصوں میں بھی شدید برف باری کا امکان ہے کیونکہ طوفان مشرق کی طرف بڑھ رہا ہے او ر جمعے کو بعض مقاما ت پر بارہ سے اٹھارہ انچ تک برف پڑسکتی ہے۔

تباہ کن طوفان منگل کو شروع ہونے کے بعد بدھ کو امریکا کے اکثر علاقوں تک پھیل گیا۔

امریکا میں بدھ اور جمعرات کو تقریباً سات ہزار پروازوں کو دوبارہ شیڈول کرنا پڑا جب کہ تقریباً ایک ہزار پروازیں صرف ڈیلاس فورٹ ورتھ ایئر پورٹ سے منسوخ ہوئیں، جب کہ دیگر ایئرپورٹ پر بھی تقریبًاً تین سو پروازیں منسوخ ہوئیں۔

نیو یارک کی گورنر کیتھی ہولک نے شہریوں سے طوفان کے تھمنے تک گھروں میں رہنے کی اپیل کی ہے۔ نیو یارک نے جمعے کو ریاست میں ایمرجنسی کا اعلان کیا تھا۔

میساچوسٹس میں ایک لاکھ سے زیادہ گھروں اور دفاتر میں بجلی منقطع ہے۔

گزشتہ برس فروری میں ٹیکساس شدید برفانی طوفانی سے متاثر ہوا تھا اور اس کو آفت زدہ قرار دیا گیا تھا۔

کئی شہروں میں برفباری سے بچے محظوظ بھی ہوئے۔

رہوڈ آئی لینڈ کے حکام نے ایمرجنسی کے علاوہ سڑکوں پر سفر کرنے کی پابندی عائد کر دی ہے۔

تیز ہواؤں اور برفانی طوفان کی وجہ سے سنیچر کو نیویارک، بوسٹن اور فلاڈیلفیا میں پروازیں بھی منسوخ ہوئیں۔

امریکی ریاستوں نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ گھروں میں رہیں اور احتیاط برتیں۔

USA

سردی

ٹیکساس

طوفان

برف باری

فلائٹ منسوخ