بھارت کاطاقت کی بنیادپرایل اوسی پرسیز فائر کادعوی بےبنيادہے،آئی ايس پی آر

بھارتی بے بنیاد دعوؤں کی تردید

Fencing of Pak-Afghan border to continue as planned: DG ISPRترجمان پاک افواج کا کہنا ہے کہ بھارتی آرمی چيف کا ايل او سی پر سيز فائر سے متعلق دعوی بے بنياد ہے۔ بھارتی آرمی چیف نے گزشتہ روز سیمنار سے خطاب میں دعویٰ کیا تھا کہ ہم نے مضبوط پوزیشن میں پاکستان سے مذاکرات کیے۔

پاک افواج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) نے بھارتی آرمی چیف کے طاقت کی بنیاد پر لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر جنگ بندی کے دعوے کو مسترد کر دیا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی آرمی چیف کا طاقت کی بنیاد پر جنگ بندی کا دعویٰ درست نہیں۔

ترجمان پاک فوج کا یہ بھی کہنا ہے کہ کنٹرول لائن کے دونوں جانب کشمیریوں کی حفاظت کے لیے سیز فائر پر اتفاق کیا گیا۔

انہوں نے بھارتی آرمی چیف کے بیان پر مزید کہا کہ کوئی بھی فریق اسے اپنی طاقت یا دوسرے کی کمزروی نہ سمجھے۔

'Witnessing Trailers Of Future Conflicts': Army Chief On China-Pak Threat

واضح رہے کہ بھارتی آرمی چیف جنرل منوج مکند نرونے گزشتہ روز جمعرات 3 فروری کو سیمنار سے خطاب میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ ایل او سی پر جنگ بندی اس لئے فائم ہے کہ  بھارت نے مضبوط پوزیشن میں مذاکرات کیے۔ بھارتی آرمی چيف کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان اور چين کے روابط پر بھی ہماری گہری نظر ہے۔

بھارتی آرمی چیف جنرل منوج مکند نراونے نے کہا تھا کہ شمالی بارڈر پر ہونے والی پیش رفت کی مناسب طریقے سے نشاندہی کر لی گئی ہے اور اس کے لیے ضروری اقدامات کیے جا رہے ہیں، جن میں بوٹس آن گراؤنڈ کے بہترین اقدام کے ساتھ ساتھ ماڈرن ٹیکنالوجی کی معاونت بھی شامل ہو گی۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی کا پہلا سمجھوتہ 2003 میں ہوا تھا، اس وقت میر ظفر اللہ جمالی وزیراعظم اور پرویز مشرف صدر تھے۔

یہ معاہدہ چار سال تک چلا اور 2007 میں فائرنگ کے واقعات ہونا شروع ہوئے۔

سنہ 2018 میں ایک بار پھر دونوں ممالک کے درمیان سیز فائر پر بات چیت ہوئی، جب کہ فروری 2021 میں دونوں ممالک کی جانب سے جنگ بندی کے معاہدے کا اعلان کیا گیا۔ جمعرات کو بھارتی آرمی چیف کا اشارہ اسی جنگ بندی کے معاہدے کی طرف تھا۔

سما سے گفتگو میں وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ بھارت ڈرتے نہيں، دفاع کے ليے تيار ہيں۔ انہوں نے کہا کہ سرحد کے دونوں اطراف رہنے والے شہريوں کی جان و مال کے تحفظ کا احساس ہے۔ بھارت انتخابات کی وجہ سے ایسا پراپیگنڈا کر رہا ہے۔ ملک کے چپے چپے کے دفاع کیلئے تیار ہیں اور رہیں گے۔

دفاعی تجزيہ کار امجد شعيب کا کہنا تھا کہ مودی حکومت جھوٹ کے سہارے کھڑی کی ہے۔ امريکی تھنک ٹينک نے بھی اس بات کی تصديق کی ہے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درميان لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی کا معاہدہ 25 فروری دو ہزار اکيس ميں طے پايا تھا۔

آئی ایس پی آر

بھارت

Tabool ads will show in this div