طوفانی ہواؤں نے شمالی یورپ میں تباہی مچادی،متعدد افراد ہلاک

شمالی یورپ میں لاکھوں گھر بجلی سے محروم

طاقتور طوفان سے یورپ کے شمالی حصے برطانیہ، ڈنمارک، پولینڈ اور جرمنی میں مختلف حادثات کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک ہو گئے۔

عالمی میڈیا کے مطابق طوفانی ہواؤں کی وجہ لاکھوں گھر بجلی سے محروم ہو گئے، پُلوں کو بند کر دیا گیا اور ٹرینیں معطل کر دی گئیں جبکہ ساحلی علاقوں میں سمندری ریلوں کے سبب فیریز کو لنگر انداز کر دیا گیا۔

جرمن میڈیا کے مطابق طوفان کو جرمنی میں 'نادیہ‘  جبکہ دیگر ملکوں میں مَلِک  کا نام دیا گیا ہےجو اتوار 30 جنوری کو یورپ کے شمالی حصوں سے ٹکرایا۔ تیز ہواؤں کے سبب ساحلی علاقوں میں سیلابی ریلے آئے جس سے ٹرانسپورٹ کا نظام بھی متاثر ہوا۔

بحیرہ شمالی اور بحیرہ بالٹک کے ساحلی علاقوں میں ہفتے کے روز طوفانی ہوائیں چلنا شروع ہو گئی تھیں تاہم اتوار کے روز جب یہ طوفان مشرق کی جانب بڑھنا شروع ہوا تو جرمن دارالحکومت برلن کے فائر ڈیپارٹمنٹ نے ایمرجنسی نافذ کر دی اور عوام کو ہدایت کی کہ وہ جہاں کہیں بھی ہیں گھروں کے اندر ہی رہیں۔

جرمن ریاست برانڈنبرگ کے شہر بیلیٹز میں ایک شخص ایک تیز ہوا کے باعث اکھڑنے والے انتخابی پوسٹر لگنے کے سبب ہلاک جبکہ ایک شخص اس واقعے میں زخمی ہوا۔ اسکاٹ لینڈ میں میں ایک 60 سالہ خاتون ایک گرتے درخت کی نیچے آ کر ہلاک ہو گئیں۔

وسطی انگلینڈ میں ایک نو سالہ لڑکا درخت گرنے سے ہلاک ہو گیا جبکہ اس کے ساتھ موجود ایک شخص اس واقعے میں زخمی بھی ہوا۔ انگلینڈ بھر میں بجلی کی تاریں ٹوٹنے کے سبب قریب 130,000 گھر بجلی سے محروم ہو گئے۔

پولینڈ میں بحیرہ بالٹک کے کنارے پر واقعے علاقے ویخیروو میں بھی درخت گرنے کے سبب ایک شخص ہلاک جبکہ ایک اور زخمی ہوا۔ پورے ملک میں 680,000 افراد بجلی سے بھی محروم ہوئے۔

جمہوریہ چیک کے ایک صنعتی علاقے میں ایک پانچ میٹر بلند دیوار گرنے کے سبب دو ورکرز اس کے نیچے دب گئے جن میں ایک شخص موقع پر ہلاک ہو گیا، ڈنمارک میں بھی تیز ہواؤں کے سبب گرنے والی ایک 78 سالہ خاتون زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئیں۔

جرمن ریل سروس کے مطابق طوفانی ہواؤں کے سبب جرمن ریاست شلیسوگ ہولشٹائن میں درخت گرنے کی وجہ سے ٹرین سروس معطل ہو گئی جبکہ ڈنمارک کو سویڈن سے ملانے والے ٹریفک اور ریلوے کے مشترکہ پُل اؤریزون کو بند کر دیا گیا۔

EUROPEAN UNION

مَلِک  طوفان

شمالی یورپ

Tabool ads will show in this div