منی بجٹ:سیلز ٹیکس لگنے سے درآمدی موبائل فونز مہنگے ہوگئے

پینتیس ہزار کے فون پر بیس ہزار سے زائد ٹیکس لاگو ہوگیا
Jan 31, 2022

منی بجٹ میں درآمدی ڈیوٹی کے ساتھ موبائل فون کی درآمد پر 17 فیصد ٹیکس کے نفاذ سے موبائل فونز کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوگیا۔

 دو سو ڈالر مالیت کے فون پر 20  ہزار سے زائد ٹیکس عائد ہوگیا جسکے بعد 35 ہزار کے فون کی قیمت 55 ہزار سے بڑھ گئی جبکہ 35 ہزار کے فون پر 14ہزار 661 ٹیکس جبکہ چھ ہزار اٹھارہ روپے سیلز ٹیکس کا اضافہ ہوگیا۔

مزید برآں 61 ہزار روپے کے موبائل فون پر 25 ہزار سے زائد ٹیکس لگ گیا فون کی قیمت 87 ہزار سے زائد ہوگئی۔

 پی ٹی اے دستاویز کے مطابق پانچ سو ڈالر کے فون پر 38 ہزار روپے سے زائد ٹیکس عائد ہوگیا۔  جنرل سیلز ٹیکس  15ہزار 45 جبکہ 23 ہزار چار سو بیس روپے رجسٹریشن فکسڈ ٹیکس عائد کردیا گیا ہے۔

موبائل کی قیمت 88 ہزار روپے سے بڑھ کر ایک لاکھ 26 ہزار سے بڑھ گئی، 97 ہزار روپے مالیت کے فون کی قیمت ٹیکسز کے بعد ڈیڑھ لاکھ سے بڑھ گئی۔ موبائل فون جتنا مہنگا ہوگا رجسٹریشن فکسڈ ٹیکس اور سیلز ٹیکس بڑھنے سے لاگت مزید بڑھے گی۔

Tax on imported mobile phones

درآمدی موبائل فونز پر ٹیکس

Tabool ads will show in this div