جدیدروسی ہتھیاروں کےمقابلے میں جرمنی کا یوکرائن کوہیلمٹ کی پیکشش

شاید جرمنی کی اگلی پیشکش سرہانے ہوں گے، وٹالی کلیچکو
Jan 27, 2022

جرمنی نے یوکرئن کو روس کے ممکنہ حملے کی صورت میں دفاع کے لیے اسلحہ مہیا کرنے کے بجائے 5 ہزار ہیلمٹ دینے کی پیشکش کی ہے۔

جرمنی کا کہنا ہے کہ یوکرین کو ہتھیار مہیا کرنے سے ہتھیاروں کی فراہمی سے تنازعے میں اور شدت پیدا ہو گی تاہم جرمنی کی جانب سے یوکرین کو 5 ہزار ہیلمٹ مہیا کرنے کی پیشکش پر جرمنی میں بھی مذاق اڑیا جا رہا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق یوکرین کے وزیر خارجہ دمترو کلیبا نے جرمنی کی طرف سے ہتھیار نہ دینے کی فیصلے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ روسی صدر ولادیمیر پوتن کی حوصلہ افزائی بند کرے تاہم جرمنی کے وزیرِ انصاف کرسٹین لیمریچٹ نے کہا کہ جرمنی کی طرف سے یوکرین کو ہیلمٹ دینا ایک واضح اشارہ ہوگا کہ جرمنی یوکرین کے ساتھ کھڑا ہے۔

یوکرین کے دارالحکوت کیو کے میئر وٹالی کلیچکو نے جرمنی کی پیشکش کو مذاق قرار دیتے ہوئے کہا کہ شاید جرمنی کی اگلی پیشکش سرہانے ہوں گے، انہوں نے کہا کہ ہیلمٹ کی پیشکش نے انہیں حیران کر دیا ہے۔

وٹالی کلچکو نے کہا کہ جرمنی یہ سمجھنے سے قاصر ہے کہ ہمارا سامنا ایک ایسی روسی فوج سے ہے جس کے پاس انتہائی جدید ہتھیار ہیں اور وہ کسی وقت بھی یوکرئن پر حملہ آور ہو سکتی ہے۔

خیال رہے کہ روس نے ہزاروں ہزار فوجی یوکرین کی سرحد پر لا کر کھڑے کر دیے ہیں اور یورپ میں ایک بڑی لڑائی چھڑنے کا خطرہ پیدا ہو چکا ہے۔ یوکرین نے مغربی اتحادیوں سے اپنی دفاعی صلاحیت کو بڑھانے کی ایپل کی ہے۔ امریکہ، برطانیہ اور بالٹک ریاستوں نے یوکرین کو اینٹی ٹینک اور اینٹی ایئرکرافٹ میزائل مہیا کرنے کا اعلان کیا ہے۔

Tabool ads will show in this div