کراچی: نامعلوم افراد نے مختلف علاقوں میں دکانیں بند کرادیں

برنس روڈ، نیوکراچی، گلشن اقبال، نیو کراچی میں کاروبار بند

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/KARACHI-KAROOBAR-BUND-26-01-.mp4"][/video]

کراچی کے مختلف علاقوں میں زبردستی دکانیں بند کرانے کی اطلاعات ہیں۔ برنس روڈ، نیوکراچی، گلشن اقبال اور کورنگی میں نامعلوم افراد دکانیں بند کرارہے ہیں، کچھ علاقوں میں ٹائر بھی نذر آتش کئے جارہے ہیں۔

ایم کیو ایم پاکستان کی وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہر احتجاجی ریلی پر پولیس کی جانب سے بدترین لاٹھی چارج اور شیلنگ کے بعد ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کل (جمعرات کو) یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا ہے۔

پولیس کی جانب سے احتجاجی ریلی پر دھاوے کے دوران رکن سندھ اسمبلی صداقت حسین سمیت متعدد افراد زخمی ہوگئے، ایم پی اے کو زخمی حالت میں گرفتار کرلیا گیا جبکہ خواتین اور کارکنوں سمیت متعدد افراد کو بھی حراست میں لیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق ایم کیو ایم کے احتجاج کے دوران پولیس تشدد سے زخمی 6 مرد اور 6 خواتین کو عباسی شہید اسپتال لے جایا گیا جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی گئی۔

احتجاج کے اعلان کے بعد کراچی کے مختلف علاقوں میں زبردستی دکانیں بند کرانے کی اطلاعات سامنے آرہی ہیں۔ رپورٹ کے مطابق موٹر سائیکل سوار نامعلوم افراد نے برنس روڈ، گلشن اقبال اور کورنگی میں دکانیں اور کاروباری مراکز بند کرادیئے۔

ایس ایس پی کورنگی شاہجہاں خان نے سماء ڈیجیٹل سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ کچھ نامعلوم موٹر سائیکل سوار علاقے میں گھوم کر لوگوں کو دکانیں بند کرنے کا کہہ رہے ہیں تاہم پولیس کی جانب سے تحفظ کی یقین دہانی کے بعد ضلع بھر کی دکانیں کھلی ہوئی ہیں۔

ایس ایس پی ضلع وسطی قمر رضا جسکانی کا کہنا ہے کہ گلشن اقبال میں کچھ نامعلوم افراد کاروبار بند کرانا چاہتے تھے تاہم پولیس نے ان کی کوشش ناکام بنادی۔

دوسری جانب پولیس اور رینجرز کی اضافی نفری بھی متاثرہ علاقوں میں پہنچ گئی جو دکانیں اور کاروبار کھلوا رہی ہیں۔

Tabool ads will show in this div