فیصل آباد: بچی پر تشددثابت، والد کا 5روزہ جسمانی ریمانڈمنظور

سوتیلی والدہ کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

فیصل آباد میں والدین کے تشدد کی شکار بچی کی میڈیکل رپورٹ میں تشدد ثابت ہوگیا، زینب کے پورے جسم پر تشدد کے نشانات پائے گئے، عدالت نے والد کو 5 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ سوتیلی ماں کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا۔

فیصل آباد میں والدین کے تشدد کی شکار 12 سالہ زینب کو گزشتہ روز پولیس نے ویڈیو وائرل ہونے کے بعد بازیاب کرایا تھا، جس کی میڈیکل رپورٹ میں تشدد ثابت ہوگیا۔

رپورٹ کے مطابق آنکھ،کان، سر، پیٹ، کمر، ہاتھوں، پاؤں اور ٹانگوں پر زخموں اور نیل کے نشانات پائے گئے۔ ڈاکٹر عماد کا کہنا ہے کہ بچی کے میڈیکل میں جسم پر نئے اور پرانے زخموں کے نشان ہیں، فالحال بچی خطرے سے باہر ہے۔

تشدد ثابت ہونے کے بعد چائلڈ پروٹیکشن بیورو کی درخواست پر میاں بیوی کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

پیشی کے دوران عدالت نے زینب کے والد کو 5 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا جبکہ سوتیلی ماں کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا۔

ملزم کا کہنا ہے کہ بار بار سمجھانے پر بھی بچے نہ سمجھیں تو سختی کرنی پڑتی ہے، زیادہ نہیں مارنا چاہتا تھا مگر سیڑھیوں سے گرگئی، میں سب میڈیا کے سامنے شرمندہ ہوں۔

عدالت نے بچی کی دیکھ بھال کیلئے اسے چائلڈ پروٹیکشن بیورو کے حوالے کردیا۔

Tabool ads will show in this div