لاہور: تعلیمی اداروں میں بچوں، اساتذہ کےکرونا ٹیسٹ کرنیکا فیصلہ

تین مثبت کیسز آنے پر اسکول سیل کیا جائے گا
Jan 25, 2022
[caption id="attachment_2316354" align="alignnone" width="800"]Schools فوٹو: آن لائن[/caption]

محکمہ ایجوکیشن پنجاب اور محکمہ صحت پنجاب نے اسکولوں اور دیگر تعلیمی اداروں میں بھی کرونا ٹیسٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

محکمہ تعلیم کے مطابق رینڈم سیمپلنگ کے لیے تعلیمی اداروں میں 12سال سے زائد عمر کے طلبا کے ٹیسٹ ہوں گے جبکہ اسکول میں موجود تمام اساتذہ کے کرونا ٹیسٹ بھی لازمی ہوں گے۔

ایک تعلیمی ادارے میں 3ٹیسٹ مثبت آنے پر متعلقہ اسکول سیل ہوگا جبکہ دو طلبا یا دو اساتذہ کے ٹیسٹ مثبت آنے پر کلاس روم کو سیل کر دیا جائے گا۔

لاہور کے تعلیمی اداروں میں روزانہ کی بنیاد پر 5ہزار کرونا ٹیسٹ کیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (اینسی او سی) نے ملک میں بڑے پیمانے پر کرونا ٹیسٹنگ کا فیصلہ کیا تھا جس کے بعد یہ اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔

کرونا کی پانچویں لہر

پاکستان میں ایک ماہ سے بھی کم عرصے میں کووِڈ 19 کے کیسز کی تعداد میں سات گنا اضافہ ہوا ہے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں 6,357 کرونا وائرس کے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، جس کے بعد مثبت کیسز کی شرح 12.81 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔