کراچی: ضلع وسطی میں سیل اسپتال کھولنے کی کوشش ناکام

اسپتال دوبارہ سیل کردیا گیا

[video width="640" height="352" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/WhatsApp-Video-2022-01-24-at-6.40.53-PM.mp4"][/video]

ضلع وسطی انتظامیہ نے سیل اسپتال دوبارہ کھولنے کی کوشش ناکام بنادی، اسپتال دوبارہ سیل کردیا گیا۔ ڈپٹی کمشنر طٰحہٰ سلیم نے شاہ میڈیکل سینٹر انتظامیہ کو غیرقانونی اقدام پر سخت تنبیہہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیر معیاری میڈیکل سینٹرز اور جعلی ڈاکٹروں کیخلاف کارروائی جاری رہیں گی۔

ڈپٹی کمشنر سینٹرل طٰحہٰ سلیم نے گزشتہ دنوں غیر معیاری میڈیکل سینٹرز کے خلاف کارروائی کے دوران مختلف علاقوں میں نجی اسپتال، کلینکس اور ڈسپنسریوں کو سیل کیا تھا، ان میں سے ایک نارتھ ناظم آباد کا شاہ میڈیکل سینٹر اینڈ جنرل اسپتال بھی تھا، جس کی انتظامیہ نے سرکاری سیل کو چھپانے کیلئے اس پر اشتہار چسپاں کردیا اور میڈیکل سینٹر کو دوبارہ آپریشنل کردیا تھا۔

سیل اسپتال انتظامیہ کی غیرقانونی حرکت کی اطلاع ملنے پر ڈپٹی کمشنر سینٹرل طٰحہٰ سلیم نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ٹو عمران علی راجپوت کے ہمراہ چھاپہ مار کر اسے دوبارہ سیل کردیا۔ اسپتال انتظامیہ موقع سے فرار ہوگئی۔

ضلعی وسطی انتظامیہ کی جانب سے ضلع بھر میں جعلی ڈاکٹرز، غیر قانونی میڈیکل سینٹرز، کلینکس اور میڈیکل اسٹورز کیخلاف بھرپور کارروائیاں جاری ہیں۔

نام نہاد ڈاکٹرز جو ایم بی بی ایس یا دیگر ضروری اسناد نہ ہونے کے باوجود عوام کی صحت سے کھیل رہے ہیں، ان کی وجہ سے اکثر و بیشتر ناگہانی واقعات اور اموات کی اطلاعات موصول ہوتی رہتی ہیں۔

ڈپٹی کمشنر ضلع وسطی طٰحہٰ سلیم نے ایسے تمام غیرمعیاری میڈیکل سینٹر اور غیرمستند ڈاکٹروں کو پریکٹس کرنے سے روکنے کی ہدایت کردی، جس کے بعد تمام سب ڈویژن میں اسسٹنٹ کمشنر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے ساتھ ملکر ایسے میڈیکل سینٹرز اور کلینکس پر کارروائی کررہے ہیں، ضروری اسناد نہ ہونے اور اسپتال کے غیر معیاری ہونے پر انہیں سیل کیا جارہا ہے۔

ضلع وسطی انتظامیہ نے طبی قوانین کے معیار پر پورا نہ اترنے والے متعدد کلینکس اور میڈیکل اسٹورز کو بھی سیل کردیا ہے۔

Tabool ads will show in this div