ملک میں سنسنی خیز جرنلزم کی جارہی ہے،گورنرپنجاب

میں تو کسی شخص کو ایم این بھی نہیں بنا سکتا

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Ch-Sarwar-Talk-Lhr-23-01.mp4"][/video]

گورنر پنجاب چوہدری سرور کا کہنا ہے کہ میرے بیان کو غلط انداز میں پیش کیا گیا، میں نے یہ نہیں کہا کہ میں نے عمران خان کو وزیراعظم میں نے بنوایا۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو میں گورنر پنجاب چوہدری سرور نے کہا کہ ہے اوورسیز پاکستانیز کمیشن بننے سے بیرون ملک پاکستانیوں کو فائدہ ہوا۔ جمہوری روایات میں ہر ووٹر اپنا کردار ادا کرتا ہے جب کہ عمران خان اور ان کے ساتھیوں نے 22 سال جدوجہد کی۔

اس موقع پر انہوں نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ میں نے نہیں کہا کہ میں نے عمران خان کو وزیراعظم میں نے بنوایا، میں تو کسی شخص کو ایم این بھی نہیں بنا سکتا، ملک میں سنسنی خیزجرنلزم کی جارہی ہے۔

فوج سے متعلق گفتگو میں گورنر پنجاب نے کہا کہ آرمی چیف کی ایکسٹینشن کے حوالے سے میری اپنی رائے ہے، ہمیں اپنی سیاست سے پاک افواج کو الگ رکھنا چاہیے۔

چوہدری سرور نے کہا کہ پیپلز پارٹی اور اس کی لیڈر شپ نے جمہوریت کے لیے بڑی قربانیاں دیں اور پیپلز پارٹی کی جدوجہد کی وجہ سے بینظیر بھٹو اقتدار میں آئیں تھیں۔ جمہوری نظام میں کسی ایک کی نہیں اجتماعی جدوجہد ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب کے عوام کو صاف پانی فراہم کر رہے ہیں اور ملتان میں فلٹریشن پلانٹ کا افتتاح کرنے جا رہے ہیں۔ ایسے لوگ بھی ہیں کہ جن کے گھروں میں واٹر ہینڈ پمپ بھی نہیں ہے تاہم ہم نے غریب گھرانوں کے لیے سولر پاور واٹر پمپ لگانے شروع کر دیئے ہیں۔ سولر پاور واٹر پمپ پلانٹ پر صرف 70 ہزار روپے لاگت آئے گی اور 20 فلٹریشن پلانٹ کھول رہے ہیں جس سے ڈیڑھ لاکھ لوگوں کو فائدہ ہو گا۔مارچ کے آخر تک پنجاب میں ڈیڑھ کروڑ لوگوں کو صاف پانی کی سہولت فراہم کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے تعاون سے منصوبے کو کامیابی سے آگے بڑھا رہے ہیں جبکہ بند فلٹریشن پلانٹ کو پنجاب حکومت سے لے کر این جی اوز کو دے رہے ہیں۔

Tabool ads will show in this div