شمالی بلوچستان میں دو سالوں بعد شدید برفباری

سیاحوں نے انتظامات کو مری سے بہتر قرار دیا

Snowfall Upd Qta Pkg 22-01

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Snowfall-Upd-Qta-Pkg-22-01.mp4"][/video]

شمالی بلوچستان میں دو سالوں بعد شدید برفباری کے بعد سیاحوں نے لطف اندوز ہونے کے لیے ہنہ اوڑک سمیت تفریحی مقامات کا رخ کر لیا۔

لاہور کراچی اور اسلام آباد سمیت اندرون ملک سے آنے والے سیاحوں نے بھی برفباری کے مزے لوٹے اور انتظامات کو مری کے مقابلے میں بہتر قرار دیا۔

محکمہ موسمیات کے مطابق قلات، مستونگ، کوئٹہ، زیارت، مسلم باغ، کان مہترزئی اور کوژک ٹاپ پر ایک انچ سے زائد برف پڑ چکی ہے۔

ہوا چلنے کے باعث ہنہ اوڑک کی مین سڑک پر برف جم گئی جس سے گاڑیاں پھسلنے لگیں۔ سیاحوں کا کہنا تھا کہ کہ انتظامیہ نے انہیں ٹاپ ایریا میں جانے سے روک دیا ہے۔

پی ڈی ایم اے حکام کے مطابق کوئٹہ مستونگ، کان مہتزئی اور کوژک ٹاپ لک پاس پر ہیوی مشینری کے ذریعے برف صاف کر دی دیگر علاقں میں بھی کام جاری ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق بارش اور برفباری کا سلسلہ کل شام تک جاری رہے گا۔

Tabool ads will show in this div