اسامہ بن لادن کا قریبی ساتھی امریکی حملے میں ہلاک

حملے کے حتمی مقام اور تاریخ سے آگاہ نہیں کیا گیا
Jan 22, 2022
فائل فوٹو
فائل فوٹو
[caption id="attachment_2504612" align="alignleft" width="800"] فائل فوٹو[/caption]

کالعدم تنظیم القاعدہ کے سربراہ اسامہ بن لادن کا قریبی ساتھی صالح بن سالم یمن میں امریکی حملے کے دوران ہلاک ہوگیا۔

برطانوی نیوز ایجنسی روائٹرز کے مطابق صالح بن سالم القاعدہ کے بانی سربراہ اسامہ بن لادن کے قریبی ساتھیوں میں شمار کیے جاتے تھے۔

جزیرہ نما عرب میں القاعدہ کی شاخ اے کیو اے پی نے یمن میں امریکی فضائی حملے میں اپنے ایک اہم فوجی کمانڈر کی ہلاکت کا اعلان جمعے کے روز کیا ہے۔

تنظیم نے صالح بن سالم بن عبید عبولان جو ابو امیر الحضرمی کے نام سے مشہور تھے کی ہلاکت کی تصدیق تو کی مگر ان کے قتل کی تاریخ یا جگہ کا ذکر نہیں کیا ایک غیر سرکاری انٹیلی جنس گروپ سائٹ نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر اے کیو اے پی کا بیان شیئر کیا۔

صالح یمن میں القاعدہ کے ہلاک ہونے والے پہلے اہم رہنما نہیں ہیں۔ اس سے قبل 2020 میں ڈونلڈ ٹرمپ نے یمن میں القاعدہ کے رہنما قاسم الریمی کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

قاسم الریمی کو شدت پسندوں کی جانب سے امریکی بحری اڈے پر فائرنگ کی ذمہ داری قبول کرنے کے چند دن بعد ہلاک کیا گیا تھا، وہ یمن میں القاعدہ کے بانی رہنما تھے۔

Tabool ads will show in this div