افغانوں کے اتحاد سےمتعلق امریکی صدر کا بیان درست نہیں،طالبان

افغانستان کو ایک حکومت کے تحت متحد کرنا ممکن نہیں، امریکی صدر
Jan 21, 2022

افغان عبوری حکومت کے وزارت داخلہ کے ترجمان عبدالقہاری بلخی کا کہنا ہے کہ افغانوں کے اتحاد سے متعلق امریکی صدر کا بیان بے بنیاد اور قابل مذمت ہے۔

عبدالقہاری بلخی کا کہنا تھا کہ امریکی قبضے کے بعد افغانوں نے کم وسائل اور زیادہ مسائل کے باوجود بہترین نظام حکومت قائم کرکے عوام کو متحد کیا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن نے دو دن قبل کہا تھا کہ افغانستان سے اپنی افواج اس لیے واپس بلا لیں کیونکہ افغانستان کو ایک حکومت کے تحت متحد رکھنا ممکن نہیں ہے۔

وائٹ ہاؤس میں نیوز کانفرنس کے دوران امریکی صدر کا کہنا تھا کہ کہ امریکا 20 برسوں سے افغانستان میں ہر ہفتے ایک ارب ڈالر خرچ کر رہا تھا اور ہم غیر معینہ مدت تک کےلیے اس کے متحمل نہیں ہوسکتے تھے۔

صدر جوبائیڈن کا کہنا تھا کہ افغانستان اس وجہ سے سلطنتوں کا قبرستان بن رہا ہے کیونکہ وہ ملک اتحاد کےلیے موثر نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے گزشتہ سال جنوری میں حکومت سنبھالی تو انہوں نے افغانستان چھوڑنے کا فیصلہ اسلئے کیا کیونکہ وہاں کامیابی غیر معمولی ہے۔

خیال رہے کہ افغانستان سے امریکی انخلا کے بعد سے کیے گئے رائے عامہ کے سروے کے مطابق زیادہ تر امریکی اس فیصلے سے ناخوش ہیں۔ فیصلے سے پریشان ہونے والوں کو مخاطب کرتے ہوئے صدرجو بائیڈن کا کہنا تھا کہ 20 سال بعد افغانستان سے آسانی سے نکلنے کا کوئی راستہ نہیں تھا۔ یہ فیصلہ جب بھی کرنا تھا نتیجہ یہی نکلنا تھا اسلئے اپنے فیصلے پر معذرت خواہ نہیں ہوں۔

Tabool ads will show in this div