بڑے شہروں میں ان ڈور ڈائننگ بند کردی گئی

نوٹی فیکیشن جاری کردیا گیا
Jan 21, 2022
[caption id="attachment_2503352" align="alignleft" width="800"] فائل فوٹو[/caption]

کرونا وائرس کی صورت حال کا جائزہ لینے کیلئے بنائے گئے ادارے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے زیادہ شرح والے شہروں میں ریسٹورنٹس میں ان ڈور ڈائننگ کی سہولت پر پابندی عائد کردی ہے۔

این سی او سی کے مطابق پاکستان میں 6 ماہ بعد کرونا کے ایک دن میں ریکارڈ مثبت کیسز رپورٹ کیے گئے ہیں، جب کہ آج بروز جمعہ 21 جنوری سے 3 شہروں میں اِن ڈور ڈائننگ پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

وبا کے پھیلاؤ کی صورت حال کے پیش نظر وفاقی دارالحکومت اسلام آباد، ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی کے ساتھ حیدرآباد میں اِن ڈور ڈائننگ پر پابندی لگائی جا چکی ہے۔

ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کی جانب سے جاری کردہ حکم نامے کے مطابق اسلام آباد بھر میں ان ڈور ڈائننگ پر 21 جنوری سے مکمل پابندی رہے گی۔

دوسری جانب محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے جاری کردہ ترمیمی نوٹیفیکیشن میں کہا گیا کہ کراچی اور حیدرآباد میں ان ڈور ڈائننگ پر عائد پابندی کا اطلاق 24 جنوری کے بجائے 21 جنوری سے ہو گا۔

ملک میں کرونا وائرس کی وبا کی صورت حال کو مانیٹر کرکے اقدامات تجویز کرنے والے نیشنل کمانڈ اینڈ اپریشن سینٹر (این سی او سی) نے جمعے کو بتایا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سات ہزار 678مثبت کیسز سامنے آئے ہیں۔

گزشتہ روز جمعرات کو ملک میں کُل 59 ہزار 343 ٹیسٹ کرائے گئے۔ اس طرح مثبت کیسز کی شرح 13 فیصد کے قریب پہنچ گئی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس 13 جون کو پاکستان میں چھ ہزار 825 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے تھے جس کے بعد یہ شرح بتدریج گر گئی تھی اور ملک میں کورونا وائرس کے باعث عائد پابندیوں میں نرمی کی گئی تھی۔

جمعرات کو ملک میں کرونا کا شکار ہونے والے 23 افراد کی موت واقع ہوئی جبکہ اس وقت 961 مریض انتہائی نگہداشت کے شعبے میں داخل ہیں۔

رواں ہفتے کرونا مثبت کیسز کی دس فیصد شرح تک پہنچنے والے شہروں میں این سی او سی کی ہدایت کی روشنی میں مختلف عارضی پابندیوں کا نفاذ کیا گیا۔