اسلام آباد:غریب بچوں کو مفت تعلیم دلوانے والا اسکول سسٹم

غریب بچوں کےلیے امید کی کرن بننے والے اسکولوں کی کہانی
Jan 19, 2022

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Pehli-Kiran-Schools-Isb-Pkg-19-01.mp4"][/video]

اسلام آباد میں پارلیمنٹ کی ناک تلے رہنے والے پسماندہ کچی بستیوں کے بچے بھی پڑھ لکھ کچھ بننا چاہتے ہیں اور ان بے بسوں کیلئے کچی بستیوں میں قائم ٹین اور ٹاٹ کے اسکولز امید کی پہلی کرن بن گئی ہے۔

کامیابی کا بس ایک ہی رستہ ہے کہ ہر بچے کے ہاتھ میں بستہ ہو، یہ نعرہ اور مقصد ہے اسلام آباد کی کچی بستیوں میں قائم ٹین اور ٹاٹ اسکولوں کا۔ پہلی کرن کے دس اداروں میں ساڑھے 3 ہزار نادار بچوں کا تابناک مستقبل پروان چڑھ رہاہے۔

پہلی کرن اسکول انتظامیہ انتظامیہ گھر گھر جا کر والدین کو بچوں کی پڑھائی کیلئے قائل بھی کرتی ہے ۔ اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ پر ہمارے اساتذہ اور پرنسپل کو روزانہ کی بنیاد پر آبادیوں میں جاکر بچوں کو لانا بھی پڑتا ہے۔

اسکول میں زیرتعلیم ایک بچی کا کہنا ہے کہ والد دیہاڑی کا کام کرتے ہیں اتنی آمدن نہیں کہ دوسرے اسکول میں پڑھ سکیں، ہمیں یہاں یونیفارم اور دیگر ضروری چیزیں بھی ملتی ہیں۔

تدریسی عمل میں اساتذہ کا جذبہ ایثار بھی شامل ہے اسکول میں کام دو شفٹوں میں ہوتا ہے، مارننگ شفٹ کا ٹائم صبح 8 سے 12 بجے ہے اور افٹر نون شفٹ کا ٹائم 12 سے 4 بجے تک ہوتا ہے۔ مخیر حضرات کی مدد سے چلنے والے ان اسکولوں سے گریجویٹ طلباء اب کئی اعلیٰ عہدوں پر بھی فائز ہیں۔

Tabool ads will show in this div