عالمی ادارہ صحت نےکرونا کےنئے ويرينٹس کے حوالے سےخبردار کردیا

اوميکرون دنيابھرميں جنگل کی آگ کی طرح پھيل رہاہے، ٹيڈروس ايدانم
Jan 19, 2022

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/NF-WHO-WARNS-OMICRON-VO-19-01.mp4"][/video]

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ ٹيڈ روس ايدانم کا کہنا ہے کہ يہ خيال درست نہيں کہ اوميکرون ويرينٹ بے ضرر ہے، يہ ساری دنيا ميں جنگل کی آگ کی طرح پھيل رہا ہے۔

جينيوا ہيڈکوارٹرز ميں صحافيوں سے گفتگو کرتے ہوئے سربراہ عالمی ادارہ صحت کا کہنا تھا کہ کووڈ نائنٹين وبا کا خاتمہ نہيں ہورہا، متاثرافراد کی تعداد بتارہی ہے کہ لوگ بيمار ہورہے ہيں اور مر رہے ہيں۔ بڑھتے ہوئے کيسز اسپتالوں پردباؤ بڑھارہے ہيں اوميکرون کو بےضرر سمجھنے کی غلطی نہ کی جائے۔

ٹيڈ روس ايدانم کا کہنا تھا کہ نظام صحت پردباؤ کم کرنے کی ضرورت ہے، خاص طورپر ان ملکوں ميں جہاں ويکسينيشن کی شرح کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ اوميکرون کا پھيلاؤ ديکھتے ہوئے کہا جاسکتا ہے کہ نئے ويرينٹس بھی سامنے آسکتے ہيں۔

Tabool ads will show in this div