ویڈیو:اب مفت میں ملنےوالی دعاوں کی ڈالرزمیں فیس دی جائیگی

مفت میں دعا نہیں دونگا پیسے لوں گا'

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Pay-For-Pray-1500-LHR-Montage-18-01-1.mp4"][/video]

لاہور کے طالب علم محمد کامران اکرم دعا تو دیتے ہیں لیکن مفت میں نہیں کیونکہ وہ دعا دینے کی قیمت ڈالرز میں وصول کرتے ہیں۔

سماء ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کامران نے کہا کہ وہ مفت میں لوگوں کیلئے دعا کرتے کرتے تھک گئے ہیں۔ اکثر لوگ ان سے کہتے تھے کہ وہ داتا دربار جائیں اور ان کے لیے دعا دیں تاکہ ان کی مشکلات حل ہوسکیں اور ان کی دل کی مرادیں سن لی جائیں۔

کامران نے بتایا کہ دعا کے مانگنے کے دوران ان کا وقت بھی لگتا تھا اور آنے جانے میں کرایہ جس کے باعث انہوں نے فیصلہ کیا کہ وہ اپنی سروسز یعنی دعا دینے کے پیسے چارج کریں گے۔

صرف دعا کے لیے وہ 15 ڈالرز چارج کرتے ہیں یعنی پاکستانی 2،654 روپے، جب کہ دعا کے ساتھ دیا جلانے کیلئے 25 ڈالرز جو پاکستانی 4 ہزار سے زائد بنتے ہیں چارج کرتے ہیں۔

اگر دعا کیساتھ ساتھ دیا، نذر اور نیاز بھی ہے تو 45 ڈالرز وصول کیے جاتے ہیں جو پاکستانی 7،962 روپے بنتے ہیں۔

علاوہ ازیں کامران کا کہنا تھا کہ اگر کسی کلائنٹ کو شک ہوتا ہے کہ یہ پیسے لوٹنے کا ایک بہانا ہے تو وہ انہیں ریویو پڑھنے یا دعا کے دوران ویڈیو کال کرنے کی یقین دہانی دیتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ دعا کے کام سے ان کی مالی مدد بھی ہوجاتی ہے جن سے وہ تعلیمی اخراجات اٹھاتے ہیں۔