مکار سیاستدانوں اورمافیاز نے اداروں کو بھی کرپٹ کردیا، وزیراعظم

نظام کاخون چوسنے والے ملک کیساتھ مخلص نہيں، عمران خان
Jan 17, 2022

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/NF-IMRAN-KHAN-RIYASAT-e-MADINA-PKG-17-01-AbD.mp4"][/video]

وزيراعظم عمران خان کہتے ہيں کہ طاقتور مکار سياستدان اور مافيا قانون سے بالاتر رہنے کے عادی ہيں، انہوں نے اداروں کو بھی کرپٹ بناديا، نظام کا خون چوسنے والی جونکيں ملک کے ساتھ مخلص نہيں، ان کو شکست دينا ضروری ہے، ملک ميں قانون کی حکمرانی کو نظر انداز کرنے کا نتيجہ قومی خزانے سے اربوں ڈالر کی لوٹ مار کی صورت ميں سامنے آيا، پاکستان کو بدلنا ہوگا۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنے تازہ مضمون ’اسپرٹ آف ریاست مدینہ‘ میں پیغام دیا ہے کہ پاکستان کو بدلنا ہوگا رياست مدينہ کی روح یہی کہتی ہے، پاکستان ميں طاقتور سياست دانوں کو قانون سے بالاتر رہنے کی لت پڑچکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس ملک ميں کہ جہاں قانون کی حکمرانی نہيں ہے، اربوں ڈالر کی کرپشن نے عوام پر اجتماعی غربت مسلط کردی ہے، 75 سال سے اشرافيہ نے پنجے گاڑ رکھے ہيں، ان لوگوں نے اپنی کرپشن کا تحفظ کرنے کیلئے اداروں کو کرپٹ بناديا ہے، خاص طور پر وہ ادارے جن کے ذمہ قانون کی بالادستی قائم رکھنا ہے، يہ لوگ ملک سے وفادار نہيں، پاکستان کی فلاح کیلئے انہيں شکست دينا ضروری ہے۔

عمران خان لکھتے ہيں کہ قوموں پر بيرونی حملے کئے جاسکتے ہيں مگر تہذيب کو بيرونی حملوں سے نہيں مٹايا جاسکتا، يہ صرف خودکشی کرتی ہيں، ہر تہذيب کا مغز اُس کے روحانی اصول ہوتے ہيں، جب يہ ختم ہوجاتے ہيں تہذيبيں مٹ جاتی ہیں۔

اپنے مضمون میں ان کا مزید کہنا ہے کہ اسلامی تہذيب کی زندگی بھی روحانی اصولوں کی پيروی ميں ہے اور يہی رياست مدينہ کی روح ہے، 5 اصول اتحاد، انصاف، قانون کی بالادستی، اعلیٰ اخلاقيات، سب انسانوں کیلئے فلاح اور علم کی جستجو سب سے اہم ہيں۔ رياست مدينہ کا پہلا اصول توحيد ہے، يہ خدا سے سارے انسانوں تک وحدت کا پيغام ہے، اس پر عمل کیلئے ہمارے سامنے رسول اللہ صلی اللہ عليہ وسلم کی سيرت بہترين مثال ہے۔

Tabool ads will show in this div