پنجاب کےاسکولوں میں12 سال سےکم عمربچوں کی نصف حاضری کی تجویز

کرونا اسکولوں سے نہیں اجتماعات سے پھیل رہا ہے،مراد راس
Jan 17, 2022

وزیر پنجاب تعلیم مراد راس کا کہنا ہے کہ صوبے کے اسکولوں میں 12 سال سے کم عمربچوں کی حاضری 50فیصد تک کرنے کی تجویز پر اگلے 24 گھنٹے میں فیصلہ کیا جائے گا۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے صوبائی وزیرتعلیم مراد راس کا کہنا تھا کہ پنجاب میں اس وقت اسکولوں میں چھٹیوں سے متعلق کوئی فیصلہ نہیں ہوا،85 فیصد سے زائد بچوں جب کہ 100 فیصد اساتذہ کی کرونا ویکسینیشن مکمل ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اسکولز سے نہیں اجتماعات سے کرونا پھیل رہا ہے۔12 سال سے کم عمربچوں کی اسکولوں میں 50 فیصد تک حاضری کرنے کی تجویز ہے،اگلے 24 گھنٹے میں اس حوالے سے فیصلہ آجائے گا۔

وزیر تعلیم نے مزید کہا کہ سب چیزیں بند ہوجائیں تو اس کے بعد اسکولز بند کرنے کا سوچنا چاہیے کیوں کہ 2 سال میں طلبہ کا بہت نقصان ہوا ہے۔۔

انھوں نے یہ بھی واضح کیا کہ این سی او سی کے ساتھ اسکولز بند کرنے کی کوئی بات ہی نہیں ہوئی ہے۔

تعلیمی اداروں میں قرآن پاک کی تعلیم سے متعلق انھوں نے بتایا کہ پہلی بارپنجاب نے قرآن پاک لازمی پڑھانے کا ایکٹ پاس کیا اوراب پنجاب میں قرآن پاک لازمی پڑھانے پرعمل درآمد ہوگا۔

انھوں نے بتایا کہ پہلی سے 5 ویں جماعت تک لازمی ناظرہ پڑھایا جائے گا اور چھٹی سے 12 ویں تک قرآن پاک کا ترجمہ پڑھایا جائے گا ۔

وزیرتعلیم کا کہنا تھا کہ نجی اسکولز لڑکوں کے لیے ٹوپیاں اوربچیوں کےلیے اسکارف کو یونیفارم میں شامل کریں۔

مراد راس نے بتایا کہ صرف عربی پڑھنا اچھی بات ہے مگر قرآن کا مطلب سمجھنا ضروری ہے،صوبے میں ایک لاکھ اساتذہ کو قرآن پاک پڑھانے کے لیے تربیت دے رہے ہیں۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ 64 ہزار اساتذہ نے پہلے ہی ایم اے عربی کیا ہوا ہے، اگرضرورت پڑی تو مزید اساتذہ کی بھرتی کریں گے۔