کروناوائرس:اسکولوں کی بندش پراین سی اوسی آئندہ ہفتے فیصلہ کریگا

ایس اوپیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کےساتھ سختی سے نمٹا جائے گا
Jan 15, 2022
[caption id="attachment_2344889" align="alignnone" width="680"] فوٹو: آن لائن[/caption]

این سی او سی نے کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کےلیے ہرممکن اقدامات کا جائزہ لینے اورنئی ایس او پیز پر غور کے لیے صوبائی وزیرصحت اور وزرائے تعلیم کا اہم اجلاس 17 جنوری کو طلب کرلیا ہے۔

اسلام آباد میں ملک میں کرونا کی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے این سی او سی اجلاس ہوا جس میں صوبوں کے ساتھ مل کر موثر اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

این سی او سی نے سندھ حکومت کے ساتھ  کرونا کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے ہر ممکن تعاون کا فیصلہ کیا۔اس حوالے سے صوبائی صحت اور وزرائے تعلیم کا اہم جلاس 17 جنوری کو طلب کرلیا گیا۔

اس اجلاس میں تعلیمی اداروں،عوامی اجتماعات،شادی کی تقریبات،انڈوراورآؤٹ ڈور کھانےاورٹرانسپورٹ سے متعلق ایس اوپیز پرغورہوگا۔

این سی او سی نے دوران پرواز کھانے پینے کی اشیا کی فراہمی پر 17 جنوری سے پابندی کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ سول ایوی ایشن کو دوران پرواز مسافروں کو ماسک کے استعمال پر عمل در آمد کی ہدایت کی گئی ہے۔ تمام ہوائی اڈوں پرکرونا ایس او پیز کو یقینی بنایا جائے گا اور ایس اوپیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کےساتھ سختی سے نمٹا جائے گا

این سی او سی نے یہ بھی فیصلہ کیا کہ پبلک ٹرانسپورٹ میں بھی کھانے پینے کی اشیاء پر17 جنوری سے پابندی ہوگی۔

اس کےعلاوہ صوبوں کوٹرانسپورٹ،تعلیمی اداروں،ریسٹورنٹس اورشادی ہالزمیں ایس او پیز پرسختی سے عمل درآمد کروانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ صوبائی حکومتوں کوصحت کی سہولیات کا ترجیحی بنیادوں پر سروے کرنے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔

این سی او سی نے کہا کہ صوبوں کو اسپتالوں میں آکسیجن بیڈز، آکسیجن اسٹاکس اور ریزروز کا سروے کرنے کے لئے کہہ دیا گیا ہے۔

این سی او سی نے کرونا ویکسینیشن مہم کو تیز کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے ویکسینیشن اہداف حاصل کرنے کیلئے تمام تر اقدامات کی ہدایت کی ہے۔

Tabool ads will show in this div