شہبازشریف کے داماد اوربیٹی کی جائیداد ضبط کرنیکاحکم

دونوں کی گرفتاری کےبعدٹرائل کا حکم
Jan 12, 2022
[caption id="attachment_1345662" align="aligncenter" width="700"] فائل فوٹو[/caption]

لاہور کی احتساب عدالت نے اپوزیشن لیڈر اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کی بیٹی اور داماد کو اشتہاری قرار دے دیا۔

لاہور کی احتساب عدالت میں پنجاب پاور ڈویلپمنٹ کمپنی، ایرا اور سرکاری محکموں کے فنڈز کی خورد برد کے کیس کی سماعت ہوئی۔

آج ہونے والی کارروائی میں عدالت نے شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران اور داماد عمران یوسف کو اشتہاری قرار دے دیا۔

عدالت نے رابعہ عمران اور عمران یوسف کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے، جب کہ دونوں ملزمان کی منقولہ و غیر منقولہ جائیداد ضبط کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔

عدالت کا کہنا تھا کہ ملزمان کو اشتہاری قرار دینے سے پہلے پیشی کے لیے 30 روز کی حتمی مہلت دی گئی لیکن شہباز شریف کی بیٹی اور داماد نے عدالتی رعایت سے فائدہ نہیں اٹھایا لہٰذا دونوں ملزمان کی گرفتاری اور عدالت پیشی تک وارنٹ گرفتاری قائم رہیں گے۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت میں رابعہ عمران اور عمران یوسف سمیت دیگر ملزمان کے خلاف ریفرنس دائر کیا گیا تھا جس میں منی لانڈرنگ ایکٹ کی دفعات بھی شامل کی گئی ہیں۔

نیب کی جانب سے دائر کیے گئے ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ ارتھ کوئیک ری کنسٹرکشن اینڈ ری ہیبلی ٹیشن اتھارٹی کے فنڈز نجی کمپنی کو منتقل کیے گئے، جس نجی کمپنی کو فنڈز منتقل کیے گئے اس کے مالک رابعہ اور عمران یوسف ہیں۔

Tabool ads will show in this div