شاہ رخ جتوئی کے اسپتال میں رہنے سے متعلق نئے انکشافات

شاہ زیب قتل کا مجرم 11ماہ جیل سے باہر رہا
Jan 11, 2022

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Shahrukh-in-Hospital-Khi-Pkg-11-01-Hasan.mp4"][/video]

شاہ زيب قتل کيس کے مجرم شاہ رخ جتوئی کو عمر قید کی سزا ہوئی مگر وہ اسپتالوں میں موجیں کرتا رہا، پورے 11 ماہ جيل سے باہر رہا۔ سماء نئے حقائق سامنے لے آيا، مجرم پہلے 3 ماہ بے ویو اسپتال میں رہا، انتظاميہ تبديل ہوئی تو اسپتال بھی تبديل کرليا اور 8 ماہ تک قمرالسلام اسپتال میں رہا۔

شاہ زیب قتل کا مجرم شاہ رخ جتوئی عمر قید کاٹنے کے بجائے 11 ماہ تک جیل سے باہر اسپتالوں میں شاہانہ زندگی گزارتا رہا، سماء ٹی وی کی تحقیق کے مطابق شاہ رخ جتوئی نے 8 ماہ قمرالسلام جبکہ 3 ماہ بے ویو اسپتال میں گزارے۔

سما کی تحقيقات ميں انتہائی دلچسپ انکشاف ہوا۔ ذرائع نے بتايا کہ بے ویو اسپتال کا بیشتر عملہ تبدیل ہوا تو شاہ رخ جتوئی نے بھی اسپتال بدل لیا لیکن تبدیل کئے گئے عملے اور مجرم کا اگلا ٹھکانا حیرت انگیز طور پر قمرالسلام اسپتال ہی تھا۔

گزشتہ سال مئی میں قتل کا مجرم شاہ رخ جتوئی قمرالسلام اسپتال منتقل ہوا تھا، اس بارے میں سینئر سپرنٹنڈنٹ جیل نے 8 جون کو اسپتال کے ڈائریکٹر کو خط لکھ کر مجرم کی صحت اور علاج کی مدت سے متعلق دریافت کیا۔

نمائندہ سماء کے مطابق لیٹر نمبر ڈی آئی جی پی۔ کے۔ جے بی 1307 کی  کاپی ڈی آئی جی جیل خانہ جات کو بھی ارسال کی گئی۔

سماء نے تحقیقات کیں تو يہ بھی معلوم ہوا کہ شاہ رخ جتوئی کے قمرالسلام اسپتال میں قیام کے دوران رات گئے بڑی بڑی گاڑیاں وہاں آیا کرتی تھیں۔ جس کی تصدیق چوکیدار اور قریبی دکانداروں نے بھی کی ہے۔

Tabool ads will show in this div