منی بجٹ: گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافے کا خدشہ،فروخت متاثر

شوروم مالکان پریشان، شہریوں کا قیمتوں میں اضافہ واپس لینے کا مطالبہ
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Mini-Budget-And-Car-Price-High-Lhr-Khurram-Pkg-10-01.mp4"][/video]

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی وفاقی حکومت کی جانب سے پیش کیے گئے منی بجٹ کی پارلیمنٹ سے منظوری کے پیش نظر گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافے کے خدشے کے باعث گاڑیوں کی خریدوفروخت بھی متاثر ہونے لگی۔

 حال ہی میں پارلیمنٹ میں پیش کیے جانے والے منی بجٹ میں ایک ہزار سی سی سے زائد کی گاڑیوں پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کو دگنا کیا گیا ہے جس کے پیش نظر بڑی سے بڑی اور عمدہ سے عمدہ گاڑیاں شورومز میں موجود ہونے کے باوجود فروخت نہیں ہو پارہی ہیں۔

سماء ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شہری زیادہ تر ونڈو شاپنگ ہی کررہے ہیں کیونکہ وہ قیمتیں پوچھتے ہی واپس چلے جاتے ہیں۔

گاہکوں کا کہنا تھا کہ منی بجٹ کے منظور ہونے سے پہلے ہی گاڑیوں کی قیمتوں کو پر لگ گئے ہیں۔

دوسری جانب کار ڈیلرز کا کہنا تھا کہ کرونا کی وجہ سے متاثر ہونے والے کاروبار کے لئے ڈیوٹی میں اضافہ کسی بڑے جھٹکے سے کم نہیں ہیں۔

ان کے مطابق ایک بے یقینی کی فضا کاروبار میں آ چکی ہے، پہلے ہی کاروبار بہت متاثرہ تھے لیکن اب صورت حال مزید بگڑے گی۔

Tabool ads will show in this div