صارفین کےبلوں میں اضافےکی خبریں درست نہیں،کےالیکٹرک

یونیفارم ٹیرف پالیسی کے تحت صارفین پر عمومی طورپراثر نہیں پڑتا
Jan 03, 2022
Pic19-069
KARACHI: Dec19- Workers of K-Electric are busy in repairing the electric wires on poles along the road side at Saddar area in Provincial Capital. ONLINE PHOTO by Syed Asif Ali
Pic19-069 KARACHI: Dec19- Workers of K-Electric are busy in repairing the electric wires on poles along the road side at Saddar area in Provincial Capital. ONLINE PHOTO by Syed Asif Ali

کےالیکٹرک نے واضح کیا ہے کہ صارفین کے بلوں میں 5.50 روپے کے اضافہ کے حوالے سے گردش کرنے والی خبریں درست نہیں ہیں۔

ترجمان کےالیکٹرک نے بتایا کہ ادارے کی جانب سے نومبر کے مہینے میں کی جانے والی فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز کے لیے درخواست جمع کرائی گئی ہے۔

نومبر میں ہونے والی فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز کے تحت کےالیکٹرک کی جانب سے 31 پیسہ فی یونٹ اضافے کی درخواست دائرکی گئی ہے اور اس اضافے کی وجہ عالمی سطح پر ایندھن کی قیمتوں میں اضافہ ہے۔

ترجمان کےالیکٹرک نے بتایا کہ ایندھن کی قیمتوں میں کمی پیشی کےاثرات قوانین کےمطابق صارفین تک براہ راست منتقل کیےجاتے ہیں اور سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ میں کےالیکٹرک کی جانب سے 5.182 روپے فی یونٹ اضافے کی درخواست بھی کی گئی ہے۔

انھوں نے مزیدبتایا کہ سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کے نتیجے میں ہونے والے اضافے کا اثر یونیفارم ٹیرف پالیسی کے تحت صارفین پرعمومی طور پر نہیں پڑتا۔

Tabool ads will show in this div