فنانس ترمیمی بل 20 جنوری تک پاس ہوجائیگا، فواد چوہدری

شہبازشریف کو نوازشریف کی واپسی یاقانونی چارہ جوئی کاآپشن دیدیا
Jan 02, 2022

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Fawad-CH-Pc-Ptv-02-01.mp4"][/video]

فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ فنانس ترمیمی بل (منی بجٹ) 15 سے 20 جنوری تک پاس ہوجائے گا، اسٹیٹ بینک کا آزاد ہونا پاکستان کے مفاد میں ہے۔ بولے کہ شہباز شريف، نواز شريف کو واپس لائيں، نہيں تو جعلی حلف نامہ جمع کرانے پر حکومت اُن کیخلاف کارروائی کی درخواست کرے گی۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی سندھ کے لوگوں سے نجانے کس چیز کا بدلہ لے رہی ہے، سندھ میں اسپتالوں کا جو حال ہے اس سے عام آدمی متاثر ہورہا ہے۔

مہنگائی سے متعلق سوال پر فواد چوہدری نے کہا کہ مہنگائی ہے لیکن پاکستان میں معاشی استحکام واپس آرہا ہے، اب صورتحال میں بہتری آنا شروع ہوگی۔ بولے کہ ہمارے دور میں مفتاح اسماعیل کی کمپنی نے تاریخی منافع بنایا، اس کے باوجود پیکیٹ میں ٹافیاں 5 سے کم کرکے 4 کردیں، ہر چیز کی ذمہ داری حکومت پر نہیں ڈالی جاسکتی۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کی وطن واپسی سے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی واپسی کیلئے وزیراعظم نے اٹارنی جنرل کو ہدایت جاری کی ہے، شہباز شریف کو دو آپشن بھی دیدیئے کہ نواز شریف کو واپس لائیں یا جعلی حلف نامے پر ان کیخلاف کارروائی کی جائے، یہاں موٹر سائیکل چوری ہونے پر بھی پولیس بہو اور بیٹیوں کو اٹھا کر لے جاتی ہے، ہائیکورٹ کو اس معاملے پر ازخود نوٹس لے کر شہباز شریف کو بلانا چاہئے۔

فنانس ترمیمی بل (منی بجٹ) پر فواد چوہدری نے کہا کہ فنانس ترمیمی بل 15 سے 20 جنوری تک پاس ہوجائے گا، ہم نے 5 سالوں میں 55 بلین ڈالر واپس کرنے ہیں، اسٹیٹ بینک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی نہیں رکھا بلکہ اسٹیٹ بینک کا آزاد ہونا پاکستان کے مفاد میں ہے۔

Tabool ads will show in this div