بلال یاسین پرحملہ، سی سی ٹی وی منظرعام پرآگئی

واقعے کا مقدمہ درج کرلیا گیا

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/Bilal-Yasin-Attack-Lhr-Pkg-01-01.mp4"][/video]

لاہور میں لیگی ایم پی اے بلال یاسین پر قاتلانہ حملے کا مقدمہ نامعلوم افراد کیخلاف درج کرلیا گیا۔ واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی منظر عام پر آگئی، جس کی مدد سے ملزمان کی شناخت کی جارہی ہے۔ بلال یاسین کا کہنا ہے کہ وہ فائرنگ کرنیوالوں کو نہیں جانتے۔

لاہور میں داتا دربار تھانے کی حدود میں مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی بلال یاسین پر موٹر سائیکل سوار دو ملزمان نے فائرنگ کی، جس میں ایم پی اے کو پیٹ اور پاؤں پر گولیاں لگیں، جنہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا۔

پولیس نے بلال یاسین پر قاتلانہ حملہ کرنیوالے ملزمان کی کلوزسرکٹ فوٹیج حاصل کرلی، جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بغیر نمبر پلیٹ موٹرسائیکل پر سوار 2 نامعلوم افراد نے چہرے چھپا رکھے تھے، فائرنگ کے بعد ایک شخص حملہ آوروں کو پکڑنے کیلئے پیچھے بھاگا لیکن دونوں ملزما فرار ہوگئے۔

مزید جانیے: لاہور میں ن لیگی رکن صوبائی اسمبلی قاتلانہ حملے میں زخمی

بلال یاسین کے مطابق وہ اپنے دوست میاں اکرم سے ملنے گئے تو نامعلوم افراد نے فائرنگ کردی، حملہ آوروں کو نہیں جانتا۔

ڈاکٹرز کے مطابق بلال یاسین کی حالت خطرے سے باہر ہے اور وہ جلد صحت یاب ہوجائیں گے۔

پولیس نے ڈیجٹیل اور فارنزک شواہد حاصل کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ اہم لیڈز مل گئی ہیں جلد ملزمان قانون کی گرفت میں ہوں گے۔