نوازشریف کووطن واپسی کا فیصلہ سوچ سمجھ کر کرناہوگا،راناثنا

اس وقت پارٹی کونوازشريف اور ان کی رہنمائی بھی میسر ہے
Dec 27, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/12/RANA-SANA-ON-NS-WAPSI-ND-SOT-27-12.mp4"][/video]

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ پاکستان واپسی کے لیے سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف کو سوچ سمجھ کر فیصلہ کرنا ہوگا۔

سماء کے مارننگ شو نيا دن ميں بات کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثنا اللہ نے نوازشريف کو سوچ سمجھ کر پاکستان واپسی کا فيصلہ کرنے کا مشورہ دے ديا۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پارٹی کو نوازشريف اور ان کی رہنمائی بھی میسر ہے، ديکھنا چاہيے کہ کيا وہ يہاں آکر اس رہنمائی کے قابل رہ سکيں گے؟

رانا ثنااللہ نے سوال اٹھایا کہ کيا نوازشريف کواپنے کيسز ميں ريليف مل سکے گا؟ واپسی سے متعلق ہر چيز کو مدنظر رکھتے ہوئے مياں نوازشریف کو فيصلہ کرنا چاہيے۔

اکیس دسمبر کو اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر مریم نواز نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایا تھا کہ نواز شریف بہت جلد واپس پاکستان آئیں گے، خواہش ہے کہ وہ کل ہی واپس آجائیں اور وہ بھی واپسی کے لیے بے چین ہیں، پاکستان ان کا ملک اور مٹی ہے۔

پچھلے ہفتے لاہور میں صحافیوں سے بات کرتےہوئے لیگی رہنما خواجہ سعد رفیق نے کہا تھا کہ نوازشریف کوابھی وطن واپس آکر ظالموں کے ہتھے نہیں چڑھنا چاہيے۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ نوازشریف تب ہی واپس آئيں گے جب پارٹی ان کو کہے گی اور ابھی وہ واپس نہیں آرہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پارٹی چاہتی ہے کہ نوازشريف جہاں ہيں وہيں رہيں اور اپنا علاج کروائیں۔

دو روز قبل سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شہباز گل نے اپنی ایک ٹوئٹ میں کہا کہ برطانیہ میں نواز شریف کے ویزے کی توسیع مسترد ہوچکی ہے اور معاملہ اپیل میں ہے، انہیں پتا ہے ویزہ منسوخ کرکے بےدخل کیا جائے گا۔

 انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی بےدخلی کو واپسی کا سیاسی فیصلہ بناکر پیش کیا جا رہا ہے۔
Tabool ads will show in this div