کوئٹہ: پولیس کے ساتھ 'مقابلے' میں دو اغواء کار ہلاک

واقعہ منظور شہید پولیس تھانہ کی حدود میں پیش آیا، پولیس

KP-Police1 صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں مبینہ پولیس مقابلے میں دو اغوا کار ہلاک ہوگئے۔

پولیس کے مطابق واقعہ منظور شہید پولیس تھانہ کی حدود میں مغربی بائی پاس پر پیش آیا جب پولیس پہلے سے گرفتار اغوا کار عبدالسخی کی نشاندہی پر ان کے ساتھیوں کی گرفتاری کے لئے جا رہی تھی.

پولیس کے مطابق ملزم کے ساتھیوں نے پولیس کو دیکھتے ہی فائرنگ شروع کر دی اور فائرنگ کے تبادلے میں ایک اغوا کار غوث الدین مارا گیا جبکہ عبدالسخی اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک ہو گیا۔

پولیس کا مزید کہنا تھا کہ ملزمان کے دیگر دو ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے جن کی تلاش جاری ہے، ہلاک اغوا کاروں کی میتیں اسپتال منتقل کر دی گئی ہیں۔

پولیس حکام کا کہنا تھا کہ ملزمان نے سرکی کلاں کے رہائشی تاجر محمد عمر کے 23 سالہ بیٹے طالبعلم امان اللہ کو غوث آباد میں ایک کباب کی دکان کے باہر سے اغوا کیا تھا اور رہائی کے بدلے لواحقین سے 3 کروڑ روپے تاوان مانگا تھا جبکہ 15 لاکھ روپے وصول بھی کئے تھے۔

ملزمان کیخلاف اغواء برائے تاوان کے واقعے کا مقدمہ تھانہ انڈسٹریل میں درج تھا۔

Tabool ads will show in this div