ٹیسٹ کرکٹرعابد علی اسپتال سے ڈسچارج

کرکٹر والد کا کہنا ہے کہ عابد 110فیصد بہتر ہیں
Dec 25, 2021

قومی کرکٹ ٹیم کے ٹیسٹ اوپنر عابد علی کو دو اسٹنٹس ڈالنے کے بعد اسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا۔

عابد علی کے والد کا کہنا تھا کہ بیٹے کو اسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا ہے لیکن عابد علی دو ہفتے تک کراچی میں ہی بحالی کے عمل سے گزریں گے جبکہ پی سی بی نے رہائش کے لیے تمام انتظامات کر دیے ہیں۔

والد عابد کا کہنا تھا کہ عابد اب 110 فیصد بہتر ہے، دعائیں کرنے پر مداحوں سمیت سب کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

اس سے قبل گزشتہ روز پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا تھا کہ عابد علی کی حالت اب خطرے سے باہر ہے اور انہیں اگلے اسپتال سے ڈسچارج کردیا جائے گا۔

عابدعلی کو اگلےہفتے اسپتال سےڈسچارج کردیا جائےگا،پی سی بی

ڈومیسٹک میچ کے دوران دل کی تکلیف کا شکار ہونے والے کرکٹر عابد علی کو ڈاکٹرز نے 2 ماہ مکمل آرام کا مشورہ دیا ہے جس بعد وہ کھیل میدان میں قدم رکھ سکتے ہیں۔

ٹیسٹ کرکٹر کی کراچی کے نجی اسپتال میں عابد علی کی انجیو پلاسٹی کی گئی تھی، وہ اکیوٹ کرونری سینڈروم نامی بیماری میں مبتلا تھے۔

ٹیسٹ کرکٹر عابد علی کی انجیوپلاسٹی کردی گئی

یاد رہے کہ کراچی میں جاری قائداعظم ٹرافی کے میچ کے دوران عابد علی کو دل میں تکلیف کی شکایت ہوئی تھی جس پر انہیں فوری طبی امداد فراہم کرتے ہوئے اسپتال منتقل کردیا تھا۔

واضح رہے کہ عابد علی نے پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے 16 ٹیسٹ میچوں کی 26 اننگز میں 49.17 کی اوسط سے ایک ہزار 180 رنز بناچکے ہیں۔