کبھی فحش فلمیں بنانے میں ملوث نہیں رہا، راج کندرا

ضمانت کے 3 ماہ بعد راج کندرا نے پہلا بیان جاری کردیا

فحش فلمیں بنانے کے کیس میں گرفتار اور پھر ضمانت پر رہا ہونے والے بولی وڈ اداکارہ شلپا شیٹی کے شوہر اور بھارتی صنعت کار راج کندرا نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ اپنی زندگی میں کبھی بھی فحش مواد کی تیاری اور تقسیم میں ملوث نہیں رہے۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اپنی ضمانت کے 3 ماہ بعد کیس کے حوالے سے سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر جاری پہلے بیان میں راج کندرا نے کہا کہ یہ سب انہیں بدنام کرنے کے لیے ان کے خلاف چلائی جانے والی مہم کا حصہ تھا۔

خیال رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے گزشتہ ہفتے راج  کندرا کو مبینہ طور پر فحش ویڈیوز تقسیم کرنے کے الزام میں درج ایف آئی آر کے سلسلے میں گرفتاری سے تحفظ فراہم کیا تھا۔ اس سے قبل  جولائی میں انہیں ممبئی پولیس نے ایک اور کیس میں گرفتار کیا تھا جہاں ان پر ایک ایپ کے ذریعے فحش فلمیں تقسیم کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا جس میں انہیں ستمبر میں ضمانت پر رہا کیا گیا تھا۔

گزشتہ روز جاری کیے گئے بیان میں راج کندرا نے کہا کہ ’اس بات پر غور کرتے ہوئے کہ بہت سے گمراہ کن اور غیرذمہ دارانہ بیانات زیرِ گردش ہیں اور میری خاموشی کو کمزوری سمجھا گیا ہے۔میں اس بیان سے شروعات کرنا چاہوں گا کہ میں اپنی زندگی میں کبھی بھی پورنوگرافی کی تیاری اور تقسیم میں ملوث نہیں رہا‘۔

راج کندرا نے مزید کہا کہ ’یہ پورا واقعہ مجھے بدنام کرنے کی مہم کے علاوہ کچھ نہیں تھا۔یہ معاملہ زیر سماعت ہے اس لیے میں وضاحت نہیں کر سکتا لیکن میں مقدمے کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہوں اور مجھے عدلیہ پر پورا بھروسہ ہے، جہاں سچ کی جیت ہوگی‘۔

شلپا شیٹی کے شوہر نے کہا کہ بدقسمتی سے میڈیا کی طرف سے انہیں پہلے ہی ’مجرم‘ قرار دیا جا چکا ہے اورمختلف سطحوں پر ان کے انسانی اور آئینی حقوق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے انہیں اور ان کے اہلخانہ کو (مسلسل) بہت زیادہ تکلیف دی جا رہی ہے۔

راج کندرا کا کہنا تھا کہ ’ٹرولنگ اور منفی عوامی تاثر بہت کمزور کرتا رہا ہے ، میں شرم سے اپنا چہرہ نہیں چھپاتا لیکن خواہش کرتا ہوں کہ اس لگاتار جاری رہنے والے میڈیا ٹرائل میں میری پرائیویسی میں مزید دخل اندازی نہ ہو۔انہوں نے کہا کہ ہمیشہ میری ترجیح میرا خاندان رہا ہے، اس موڑ پر کسی اور چیز کی اہمیت نہیں ہے‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ  ان کا ماننا ہے کہ عزت کے ساتھ جینا ہر فرد کا ناقابل تنسیخ حق ہے اور وہ اسی کی درخواست کرتے ہیں۔

واضح رہے کہ راج کندرا کو ممبئی پولیس نے رواں برس 19 جولائی کو فحش فلمیں بنانے اور ماڈلز کو بلیک میل کرنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا اور پانچویں بار ضمانت کی درخواست دائر کرنے پر ممبئی ہائی کورٹ نے ستمبر میں ان کی درخواست منظور کرلی تھی۔

ان کی اہلیہ او اداکارہ شلپا شیٹی پولیس کو ریکارڈ کرائے گئے  2 بیانات میں شوہر کے فحش فلمیں بنانے کے الزامات کو مسترد کیا تھا لیکن ساتھ ہی بتایا تھا کہ وہ اپنے کاموں میں اتنی مصروف تھیں کہ شوہر کی حرکتوں پر نظر ہی نہ رکھ سکیں۔